اقتدار میں آئے تو سب لٹیروں کا احتساب کرینگے: شاہ محمود قریشی

اقتدار میں آئے تو سب لٹیروں کا احتساب کرینگے: شاہ محمود قریشی

ملتان (نیوز رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی بدولت ملک میں(بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

پہلی دفعہ لٹیروں کا احتساب ہوا اور وہ گرفت میں آئے۔اقتدار میں آئے تو سب لٹیروں کا احتساب کریں گے ۔ لوٹی ہوئی دولت واپس لائیں گے‘ جو کام حکومت کو کرنا چاہئے تھا وہ چیف جسٹس کررہے ہیں ۔ شہباز شریف لاہور چھوڑ کر کراچی گئے ہیں لیکن انہیں وہاں سے کچھ نہیں ملنے والا۔ زرداری اور شریف برادران ایک ہی سکہ کے دو رُخ ہیں عوام دونوں سے بدظن ہیں۔ کراچی میں گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کے ساتھ ملکر زرداری کا مقابلہ کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز این اے 156 اور پی پی 217 کی یونین کونسل 48 جوگ مایا سے کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا ن لیگ کی نا اہلی کی وجہ سے پاکستان کو گرے لسٹ میں ڈال دیا گیا ہے۔ جس سے نہ صرف عالمی سطح پر پاکستان کی بدنامی ہوئی ہے بلکہ سفارتی سطح پر پاکستان کی بہت بڑی ناکامی ہوئی ہے۔ ن لیگ کے پانچ سالہ دورہ حکومت میں ملک کی معیشت گرتی رہی۔ حکمرانی قرضہ لے کر عوام کو سود در سود قرضوں میں جکڑتے رہے۔ میٹرو بس اور اورنج ٹرین جیسے منصوبے صرف ایک شخص کی ضد پر بنائے گئے۔ اگر اربوں روپے پنجاب کی صحت ‘ سڑکوں اور تعلیمی منصوبوں پر لگائے جاتے تو عوام کا معیار زندگی بلند ہو سکتا تھا۔ انہوں نے کہا پاکستان کے عوام نے اب فیصلہ کرلیا ہے کہ اگر ملک کی تقدیر بچانی ہے تو عمران خان کو اقتدار میں لانا ہوگا۔ اللہ کے فضل سے عمران خان کو اقتدار میں آنے سے کوئی نہیں روک سکتا۔ انہوں نے کہا اقتدار میں آنے کے بعد ہم نے ایسے منصوبے اور پالیسیاں تشکیل دینا ہے جن سے عام آدمی کا معیار زندگی بلند ہوگا۔ ملک کو ایک فلاحی ریاست بنائیں گے۔ منافع خوری ‘ قبضہ مافیا ‘ دہشتگردی‘ بدامنی ‘ کرپشن جیسے مافیا کو لگام ڈالیں گے۔ ایک دفعہ اگر عوام نے اعتماد کیا تو انشاء اللہ اگلی چند دہائیوں میں تحریک انصاف ملک میں اقتدار پر رہے گی اور ملک کی عوام واضح ترقی محسوس کریں گے۔ عمران خان کے آنے سے ملک اندرونی و بیرونی سازشوں سے محفوظ رہیگا۔ تمام ملکوں سے برابری کی سطح پر آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کریں گے۔ ایسی خارجہ پالیسی تشکیل دیں گے جس سے تمام ممالک کے ساتھ برابری کے تعلقات تشکیل پائینگے۔ ملکی معیشت کو کنٹرول کریں گے۔ ملک میں امن وامان کا قیام اولین ترجیح ہوگی۔ بلدیات کا ایسا نظام تشکیل دیں گے جس سے بلدیاتی نمائندوں کو ناصرف اختیارات حاصل ہونگے بلکہ ترقیاتی منصوبہ جات بلدیاتی نمائندوں کے ذریعے پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے ۔ زندگی کے ہر شعبہ میں اصلاحات نافذ کریں گے جس کے ملک اور قوم پر دورس اثرات مرتب ہوں گے۔ ایسا طرز حکومت اور نظام قائم کریں گے کہ عوام پیپلز پارٹی اور ن لیگ کو بھول جائیں گے۔ احتساب ہر شخص اور ہر جماعت کیلئے ہوگا۔ کسی شخص کو قومی دولت لوٹ کر اثاثے بنانے کی اجازت نہیں ہوگی۔ ووٹ اور ووٹر کو عزت دیں گے ہم خالی نعرے نہیں بلکہ عملی اقدامات پر یقین رکھتے ہیں۔ اقتدار میں آتے ہی سو روزہ ایجنڈا مکمل کریں گے۔ پہلے سو دنو ں میں حکومتی کارکردگی عوام کے سامنے آئیگی۔ اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما رانا عبدالجبار ‘ سابق ٹاؤن ناظم میاں جمیل احمد ‘ راؤ امجد علی ‘ میاں فاروق اور دیگر شخصیات ان کے ہمراہ تھیں۔اس موقع پر پی پی 217 کی یونین کونسل47کے چیئرمین رانا عرفان اللہ ‘ شوکت حسین بھٹی ‘ خلیل الرحمن‘ ناصر ملک ‘ محمد شریف ارائیں صدر ممتاز آباد مارکیٹ‘ چیئرمین ملک اسلم بھٹہ ‘چیئرمین ملک ممتاز بھٹہ‘ چیئرمین میاں تنویر رسول قریشی‘ رانا عبدالرحمن نائب صدر مسلم لیگ ‘ ملک شاہد ذیشان ‘ عظیم بھٹہ نائب صدر مسلم لیگ ن ‘ فہمیدہ چوہان ممبر میونسپل کارپوریشن ملتان ‘ مہناز اسلم ممبر میونسپل کارپوریشن ملتان ‘ نسیم جمیل راؤ ممبر میونسپل کارپوریشن ملتان ‘ عبدالوحید ببلی چیئرمین ‘ عبدالحلیم شاہ چیئرمین اور ملک یوسف مسلم لیگ ن چھوڑ کر اپنے ساتھیو ں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت اور مخدوم شاہ محمود قریشی کی حمایت کا اعلان کیا۔ این اے 156 یونین کونسل64امیدوار ملک نذر کھکھ پیپلز پارٹی چھوڑ کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا ۔ این اے 156 پی پی 216کی یونین کونسل21سے ن لیگ کے مخدوم مرید حسین اور مخدوم غلام عباس ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت اور مخدوم شاہ محمود قریشی کی حمایت کا اعلان کیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر