انتخابات میں امن عامہ کو یقینی بنانے کیلئے صوبہ بھر میں دفعہ 144نافذ

انتخابات میں امن عامہ کو یقینی بنانے کیلئے صوبہ بھر میں دفعہ 144نافذ

ملتان (سپیشل رپورٹر)محکمہ بلدیات پنجاب نے الیکشن کمیشن آف پاکستان کے ضابطہ اخلاق پر عملدر آمد کرتے ہوئے تمام بلدیاتی افسران و اہلکاران کی مانیٹرنگ کا سختی سے فیصلہ(بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

کیا ہے تاکہ کسی بھی سیاسی شخصیت بارے پسند یا نا پسند، خیالات اور ترجمانی نہ ہو سکے۔ ترجمان محکمہ بلدیات پنجاب کے مطابق اس سلسلہ میں اگر کسی بھی جگہ سے شکایت مو صول ہوئی توسخت ایکشن لینے کی ہدایت کر دی گئی ہے۔ صوبہ بھر میں الیکشن 2018ء کے صاف شفاف انعقاد کے لئے تمام تر انتظامات مرحلہ وار مکمل کئے جا رہے ہیں۔الیکشن کمیشن آف پاکستان کی طرف سے محکمہ بلدیات کو موصول ہونے والی کسی بھی شکایت کا ازالہ کیا جا رہا ہے۔الیکشن کے عمل کے دوران ڈائریکٹر،ڈپٹی ڈائریکٹر، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ اور سیکرٹریز یونین کونسلز ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسرز کے ساتھ معاونت کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ لوکل گورنمنٹ ریٹرننگ آفیسرز کے ساتھ اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسرز کے تعاون کو یقینی بنا رہا ہے۔وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر صوبے بھر کی 141قومی اسمبلی او ر 297صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر آئندہ ماہ منعقد ہونے والے انتخابات میں لا اینڈآرڈر کی صورتحال کو درپیش خدشات کے پیش نظر اور امن عامہ کو یقینی بنانے کیلئے صوبہ بھر میں دفعہ 144نافذ کر دی ہے۔ جس کے تحت ہر قسم کے بشمول لائسنس یافتہ اسلحہ لے کر چلنے اور اس کی نمائش، ہر قسم کی فائرنگ، الیکشن کمیشن کے جاری کردہ ضابطہ اخلاق کی کسی بھی شق کی خلاف ورزی، دیہی علاقے کے پولنگ اسٹیشن کے 400میٹر کے دائرہ کے اندر، گنجان آباد شہری علاقے کے پولنگ اسٹیشن کے 100میٹر کے اندر پانچ افراد سے زیادہ لوگوں کے اکٹھے ہونے (علاوہ ازاں ووٹر لائن)،آتش بازی کرنے،پولنگ اسٹیشن اور عوامی اجتماعات میں فائر کریکر، پٹاخے چلانے،وال چاکنگ کرنے سپیکر کے غلط استعمال اور نفرت پر مبنی اشتعال انگیزتقاریر کرنے،ریلیاں نکالنے،اجتماعات کرنے اور الیکشن آفس کے باہر جیت کا جشن منانے پر پابندی عائید کر دی گئی ہے۔اس سلسلہ میں تمام بلدیاتی افسران کو بھی ہدایت کی گئی ہے کہ وہ بھی مقامی انتظامیہ کے ساتھ مل کر ان ہدایات پر عمل در آمد کو یقینی بنائیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر