سیاست میںّ آنے کا مقصد عوامی مسائل کا حل ہے :سید افتخار حسین شاہ

سیاست میںّ آنے کا مقصد عوامی مسائل کا حل ہے :سید افتخار حسین شاہ

کوہاٹ (بیورورپورٹ) کوہاٹ کے صوبائی حلقہ پی کے 82 سے امیدوار سابق گورنر سید افتخار حسین شاہ نے کہاہے کہ میرا سیاست میں آنے کا مقصد عوامی مسائل کا حل ہے جو سینیٹ یا قومی اسمبلی کی نشست پر انتخاب لڑکر ممکن نہیں تھا لہٰذا میں نے ان دونوں نشستوں پر ٹکٹ لینے سے انکار کیا عزت اور شہرت تو آرمی نے اور محبت عوام نے دی ہے وہ کوہاٹ پریس کلب میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے اس موقعہ پر پی ٹی آئی ریجن کے سینئر نائب صدور شہباز گل شنواری ‘فاروق زمان شنواری‘ میروائس شنواری اور کارکنان کی کثیر تعداد بھی موجود تھی سید افتخار حسین شاہ نے کہا کہ عمران خان اور پی ٹی آئی کا وژن کرپشن کے خلاف جہاد ہے مگر بعض مفاد پرست عناصر میرے صوبائی الیکشن لڑنے سے خوفزدہ تھے اور وہ مجھے الیکشن سے بائی پاس کرنے کے درپے تھے میرے ساتھ کئی دیگر جماعتوں کے قائدین نے ملاقات کرکے ٹکٹ کی پیشکش کی مگر میں نے آزاد حیثیت سے الیکشن لڑنے کو ترجیح دی اور اپنے جماعتی قائدین کے ٹکٹوں کی تقسیم پر جن حالات کا مطالعہ کیا ان سے دلبرداشتہ ہوگیاکہ وہ کرپشن کے خلاف جہاد کرنے والوں اور میرٹ کے بجائے ذاتی پسند وناپسند کو ترجیح دینے لگے ایک سوال کے جواب میں ان کاکہنا تھا کہ ٹکٹوں کی تقسیم کے وقت مجھ سے کسی نے کچھ پوچھا تک نہیں البتہ ابھی تک میں نے تحریک انصاف چھوڑنے کافیصلہ نہیں کیا منتخب ہونے کے بعد حتمی فیصلہ کرونگا فاروق زمان شنواری اور شہباز گل شنواری نے سید افتخار حسین شاہ کے حق میں الیکشن سے دستبرداری کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف خیبرپختونخوا پر قبضہ مافیا کا راج ہے ہم کرپٹ لوگوں کو عمران خان کے وژن کے مطابق اسمبلیوں میں بھیجنے کے حق میں نہ تھے افتخار حسین شاہ کی بے داغ شخصیت کو ہم آگے لانا چاہتے تھے مفاد پرست ٹولے نے انہیں مسترد کرکے پی ٹی آئی منشور کی دھجیاں اڑادیں اور ہمیں آزاد طورپر الیکشن میں حصہ لینا پڑا وزیراعلیٰ نے پی ٹی آئی کو خٹک پی ٹی آئی میں تبدیل کرکے پارٹی مفادات کو سخت نقصان پہنچایا ان کاکہنا تھا کہ ہمیں کوہاٹ کے مفادات عزیز ہیں نوشہرہ کی بالادستی ہر گز قبول نہیں ضمیرفروشوں کو منہ کی کھانی پڑیگی اورانشاء اللہ ہم سید افتخار حسین شاہ کو کامیابی دلاکر اسمبلی میں بھیجیں گے تاکہ کوہاٹ کی آنے والی نسلوں کو کرپٹ عناصر کے رحم وکرم پر چھوڑنے کے بجائے ان کا مستقبل روشن بنایاجاسکے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...