پی پی 10پرویز اشرف کی مداخلت ،چوہدری کامران سے پیپلز پارٹی کا ٹکٹ واپس

پی پی 10پرویز اشرف کی مداخلت ،چوہدری کامران سے پیپلز پارٹی کا ٹکٹ واپس

راولپنڈی(سید گلزار ساقی سے) پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت نے چوہدری نثار علی خان کی کامیابی کی راہ ہموار کرتے ہوئے حلقہ پی پی10سے پیپلز پارٹی کے امیدوار چوہدری کامران اسلم سے ٹکٹ واپس لیکر ایک غیر معروف شخص کو دیدیا ،چوہدری کامران اسلم کا خاندان پچھلے کئی سالوں سے مشکل وقت میں پیپلزپارٹی کے ساتھ رہا،ٹکٹ واپس لینے سے پی پی10سمیت راولپنڈی کے جیالے تشویش کا اظہار کر رہے ہیں، پیپلز پارٹی سینٹرل سیکرٹریٹ پنجاب کے انچارج نسیم صابر نے بتایا گیا کہ سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے کہنے پر ٹکٹ تبدیل کیا گیا ہے،تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے بارے میں عوام میں ایک رائے پائی جار ہی ہے کہ بعض حلقوں میں اُنکو امیدوار نہیں ملے جس وجہ سے پیپلز پارٹی خاصی مشکلات کا شکار ہے، لیکن ادھر اعلیٰ قیادت نے پیپلزپارٹی راولپنڈی کے حلقہ پی پی 10سے مضبوط امیدوار سابق ایم پی اے چوہدری کامران اسلم سے ٹکٹ واپس لے کر ایک غیر معروف امیدوار کو دے دیا گیا ہے، اس فیصلے سے حلقہ پی پی10کے کارکنوں میں شدید غم و غصہ پایا جا رہا ہے کارکنوں کا کہنا ہے کہ پیپلزپارٹی کی اعلیٰ قیادت نے یہ فیصلہ غلط کیا ہے اس سے چوہدری نثار علی خان کی کامیابی کی راہ ہموار کرنے کے مترادف ہے،یاد رہے کہ چوہدری کامران اسلم خان کو این اے59اور پی پی 10کا ٹکٹ دیا اب صوبائی اسمبلی کا ٹکٹ واپس لینے کے بعد اب کامران اسلم این اے59 سے پیپلز پارٹی کے امیدوار ہیں اس سلسلے میں جب روزنامہ پاکستان نے مختلف پارٹی کے راہنماؤں سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ پنجاب سینٹرل سیکرٹریٹ کا فیصلہ ہے اور جب وہاں رابطہ کیا گیاتو انچارج پنجاب سینٹرل سیکرٹریٹ نسیم صابر نے بتایا کہ یہ ٹکٹ اب مرزا پرویز اختر کو دیا گیا ہے اور چوہدری کامران قومی اسمبلی کا الیکشن لڑیں گے انہوں نے بتایا کہ سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے یہ ٹکٹ کامران اسلم سے واپس لیا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر