یورپی یونین، برطانیہ نے پی آئی اے کی پروازوں پر 6ماہ کیلئے پابندی لگا دی

یورپی یونین، برطانیہ نے پی آئی اے کی پروازوں پر 6ماہ کیلئے پابندی لگا دی

  

کراچی (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)یورپی یونین کی ائیرسیفٹی ایجنسی نے پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز (پی آئی اے) کی یورپی ملکوں کیلئے فضائی آپریشن کا اجازت نامہ 6 ماہ کیلئے معطل کردیا۔معطلی کا اطلاق یکم جولائی 2020 کو رات 12 بجے یو رپی وقت کے مطابق شروع ہوگا۔یورپی ائیر سیفٹی ایجنسی کے فیصلے کے بعد پی آئی اے کی یورپ کیلئے تمام پروازیں عارضی طور پر منسوخ کردی گئیں، جن مسافروں کے پاس پی آئی اے کی بکنگ ہے وہ بکنگ آگے کرواسکتے ہیں یا ریفنڈ لے سکتے ہیں۔ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ پی آئی اے یورپی ائیر سیفٹی ایجنسی کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے اور ان کے خدشات کو دور کرنے کیلئے اقدامات اٹھا رہا ہے۔ترجمان کا کہنا ہے کہ ہمیں امید ہے کہ حکومتی اور انتظامیہ کی جانب سے لیے گئے اقدامات کے باعث معطلی جلد ختم ہوگی۔خیال رہے کہ گذشتہ دنوں وزارت ہوابازی نے 262 مشکوک پائلٹس کی فہرست جاری کی تھی، اس حوالے سے وفاقی وزیر غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ 148مشکوک لائسنس کی لسٹ پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز (پی آئی اے) کو بھجوادی گئی اور انہیں ہوابازی سے روک دیا گیا ہے،دیگر مشکوک لائسنس والے پائلٹس 100 سے زائد ہیں، ان کی تفصیلات بھی سول ایوی ایشن ویب سائٹ پر بھیج دی ہیں۔غلام سرورخان کا کہنا تھاکہ پی آئی اے میں 28 پائلٹس کی ڈگریاں جعلی ثابت ہوچکی ہیں، حالیہ دنوں میں 4 گھوسٹ پائلٹس فارغ کیے ہیں۔یورپی یونین کے بعد برطانیہ کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بھی پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز (پی آ ئی اے) کی پروازوں پر پابندی عائد کردی۔برطانیہ کی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ترجمان کے مطابق فیصلہ یورپی یونین کے 30 جون کے فیصلے کے پیشِ نظرکیا گیا ہے اور لندن، مانچسٹر اور برمنگھم سے پی آ ئی اے کا فلائٹ آ پریشن فوری طور پر روک دیاگیا ہے۔ یورپی ائیرسیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کا فضائی آپریشن کا اجازت نامہ معطل کردیا۔پی آئی اے ذرائع کے مطابق کوروناوائرس کے باعث برطانیہ سے مخصوص اور چارٹر فلائٹس آپریٹ ہورہی تھیں۔خیال رہے کہ یورپی یونین کی ائیرسیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کا یورپی ملکوں کے لیے فضائی آپریشن کا اجازت نامہ 6 ماہ کیلئے معطل کردیا ہے اور اس کا اطلاق یکم جولائی 2020 کو یورپی وقت کے مطابق رات 12 بجے شروع ہوگادوسری طرف سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) نے اندرون ملک پروازیں چلانے کی اجازت میں دو ماہ کی توسیع کردی ہے۔سی اے ا ے اعلامیہ کے مطابق 30 جون تک ملک کے 6 ایئر پورٹس پراندرون ملک پروازوں کی اجازت دی تھی۔ اندرون ملک پروازیں چلانے کی اجازت میں اب 31 اگست تک توسیع کردی گئی ہے۔سی اے اے اعلامیہ کے مطابق لاہور، کراچی، اسلام آباد، پشاوراور کوئٹہ سے اندرون ملک پروازوں کی اجازت ہوگی۔سی اے اے کے مطابق اسکردو ایئرپورٹ کیلئے صرف اسلام آباد سے پروازیں چلانے کی اجازت ہوگی۔ ملک کے دیگرتمام ایئرپورٹس پر اندرون ملک پروازیں ممنوع رہیں گی۔

پی آئی اے

لاہور(خبر نگار، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)) پنجاب میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے توسیعی نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ پنجاب کے مطابق نوٹیفکیشن کا اطلاق فی الفور ہوگا جو 15جولائی تک نافذ العمل رہے گا۔سیکریڑی پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیرکیپٹن (ر) محمد عثمان کے مطابق تعلیمی ادارے، شادی ہال، ریسٹورنٹ، پارک اور سینما ہالز بدستور بند رہیں گے۔ سماجی اور مذہبی اجتماعات، کھیل کی سرگرمیوں کے لیے اکٹھ کی اجازت نہیں ہو گی۔تمام کاروباری مقامات صبح 9 سے شام 7 بجے تک، سوموار تا جمعہ کھلے رہیں گے۔ میڈیکل سٹور، پنکچر شاپ، آٹا چکی تندور، زرعی ورکشاپس 24 گھنٹے کھلی رکھنے کی اجازت ہوگی۔کال سینٹرز کو 50 فیصد سٹاف کے ساتھ کھلا رکھنے جبکہ بین الاضلاع ٹرانسپورٹ 24 گھنٹے چلنے کی اجازت ہوگی۔ گروسری اور کریانہ سٹور صبح 9 سے شام 7 تک، ہفتہ بھر کھلے رہیں گے۔ تمام چرچ صرف اتوار کو صبح 7 سے شام 5 بجے تک عبادت کے لیے کھلے رہیں گے۔ملک میں کورونا سے مزید 88 افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ 4143 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جس سے اموات کی مجموعی تعداد 4391 ہوگئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 213302 تک پہنچ گئی اب تک پنجاب میں کورونا سے 1762 اور سندھ میں 1377 افراد انتقال کرچکے ہیں جب کہ خیبر پختونخوا میں 951 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ اس کے علاوہ اسلام آْباد میں 128، بلوچستان میں 121، آزاد کشمیر میں 28 اور گلگت بلتستان میں 24 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ بروز منگل ملک بھر سے کورونا کے مزید 4143 کیسز اور 88 ہلاکت رپورٹ ہوئی جس میں سے سندھ سے 2701 کیسز اور 34 اموات، پنجاب سے 761 کیسز اور 35 ہلاکتیں، خیبر پختونخوا سے 483 کیسز اور 16 اموات، بلوچستان سے 50 کیسز اور 2 اموات، اسلام آباد سے 132 کیسز ایک ہلاکت اور ا?زاد کشمیر سے 16 کیسز سامنے آئے ہیں۔وفاقی دارالحکومت سے کورونا کے مزید 132کیسز اور ایک ہلاکت سامنے آئی ہے جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی۔ا?زاد کشمیر سے کورونا کے مزید 16 کیسز سامنےٓئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کیے گئے ہیں۔پنجاب سے منگل کو کورونا کے باعث مزید 35 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 1762 ہوگئی۔صوبائی ڈیزاسٹر منیجمنٹ اٹھارٹی کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق پنجاب گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 761 افراد میں مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی جس کے بعد متاثرہ مریضوں کی تعداد 76262 تک پہنچ گئی ہے۔پنجاب میں اب تک کورونا سے 27488 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔سندھ میں کورونا وائرس کے باعث مزید 34 افراد جان کی بازی ہارگئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 1377 ہوگئی۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 2701 افراد میں مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد صوبے میں متاثرہ مریضوں کی تعداد 81955 تک جاپہنچی ہے۔خیبر پختونخوا میں منگل کو کورونا وائرس سے مزید 16 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 951 ہوگئی۔دنیابھرمیں نوول کروناوائرس کے مصدقہ کیسز کی تعداد1کروڑ3لاکھ 2ہزار52ہوگئی ہے، امریکہ 25لاکھ 90ہزار552مصدقہ کیسز کے ساتھ سرفہرست ہے جبکہ برازیل 13لاکھ 68 ہزار 195کیسز کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے، روس میں مصدقہ کیسز کی تعداد6لاکھ 40ہزار 246 ہو گئی ہے۔بھارت میں کل مصدقہ کیسز کی تعداد5لاکھ 66ہزار840، برطانیہ میں 3لاکھ 13ہزار470جبکہ پیرو میں 2لاکھ 82ہزار365ہوگئی ہے۔چلی میں مصدقہ کیسز کی تعداد2لاکھ 75ہزار999تک پہنچ گئی ہے جبکہ سپین میں کل تعداد2لاکھ 48ہزار970ہوگئی ہے۔اٹلی میں کل مصدقہ کیسز کی تعداد2لاکھ 40ہزار436جبکہ چین میں 85ہزار227ہوگئی ہے۔

لاک ڈاؤن

مزید :

صفحہ اول -