ٹیکس گزاروں کی اپیلیں نظر انداز، اثاثہ ڈیکلیئریشن ایمنسٹی سکیم کی مدت ختم

  ٹیکس گزاروں کی اپیلیں نظر انداز، اثاثہ ڈیکلیئریشن ایمنسٹی سکیم کی مدت ختم

  

اسلام آباد(آن لائن)اثاثہ ڈیکلیئریشن کی ایمنسٹی سکیم 2019ء کی مدت ختم،ایف بی آر نے فائدہ نہ اٹھانے والوں اور بقایاجات ادا نہ کرنیوالوں کیخلاف سخت قانونی کارروائی کا اعلان کردیا۔ٹیکس گزاروں کی وزیراعظم اور مشیر خزانہ سے تاریخ میں توسیع کی اپیلیں دھری رہ گئیں۔ایف بی آر نے بھاری جرمانوں،جائیداد اور بنک اکاؤنٹس کی ضبطگی اور قید کی سزاؤں کا عندیہ دیدیا۔منگل کے روز ترجمان ایف بی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اثاثہ جات ڈیکلیئریشن سکیم کی مدت ختم ہوگئی ہے،ٹیکس ایمنسٹی سکیم سے ایف بی آر کو مجموعی طور پر64 ارب روپے حاصل ہوئے ہیں۔گزشتہ برس ایف بی آر نے ٹیکس ایمنسٹی سکیم کی مد میں 53ارب جبکہ رواں برس30جون تک صرف11ارب روپے وصول کئے ہیں۔اندرون بیرون ملک اثاثے ظاہر کرنے کی سکیم گزشتہ برس شروع کی گئی تھی سکیم سے فائدہ نہ اٹھا نے والوں کیخلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں حصہ لے کر بقایاجات جمع نہ کروانیوالوں سے پورا جرمانہ وصول کیا جائیگا جرمانے میں جائیداد اور بنک اکاؤنٹس کی ضبطگی اور قید کی سزائیں شامل ہیں۔واضح رہے ٹیکس بارز،لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر اور بڑی تعداد میں ٹیکس گزاروں نے کورونا وبا کے باعث ٹیکس ایمنسٹی سکیم کے بقایاجات ادائیگی کی تاریخ میں 31 دسمبر تک توسیع کی درخواست کی تھی۔

سکیم مدت ختم

مزید :

صفحہ اول -