ایل او سی، بھارتی فوج کی لیپہ سیکٹر میں سول آبادی پر گولہ باری، فائرنگ، 15سالہ لڑکا شہید

ایل او سی، بھارتی فوج کی لیپہ سیکٹر میں سول آبادی پر گولہ باری، فائرنگ، ...

  

چناری(آن لائن)بھارتی فوج کی دوسرے روز بھی لائن آف کنٹرول کے لیپہ سیکٹر کی سول آبادی پر بلا اشتعال گولہ باری و فائرنگ پندرہ سالہ بچہ شہید، مقامی لوگ کئی گھنٹوں تک زیر زمین مورچوں میں پناہ لینے پر مجبور رہے، پاک فوج کی بھر پور جوابی کارروائی کے بعد بھارتی گنیں خاموش ہو گئیں،جس کے بعد مقامی لوگوں نے سکھ کا سانس لیا۔تفصیلات کے مطابق منگل کی علی الصبح بھارتی فوج نے وادی لیپہ کی ڈھوک ڈنہ پر بلا اشتعال گولہ باری شروع کر دی، بھارتی گولہ باری کے باعث پندرہ سالہ محمد توحید ولد محمد اسماعیل ساکنہ تلہ واڑی شہید ہو گئے۔بھارتی گولہ باری کے باعث چننیاں بازار مکمل طور پر بند ہو گیا۔ سرحدی دیہاتوں کے عوام کئی گھنٹے تک زیر زمین مورچوں میں پناہ لینے پر مجبور رہے۔پاک فوج کی بھر پور جوابی کارروائی کے بعد بھارتی گنوں کو سانپ سو نگھ گیا،جس کے بعد مقامی آبادی نے سکھ کا سانس لیا گذشتہ شام بھی بھارتی فوج نے وادی لیپہ کے سرحدی دیہات چننیاں میں ایک مسافر جیپ پر فائرنگ کر کے جیپ ڈرائیور محمد صغیر ولد منگتا ساکنہ لبگراں کو زخمی کر دیا تھا، جنہیں ایم ڈی ایس لیپہ میں داخل کروا دیا گیا ہے، بھارتی فوج کی جانب سے منگل کے روز نشانہ بنائے گئے علاقے ڈھوک ڈنہ میں فون کی سہولت نہ ہونے کے باعث مزید تفصیلات تاحال موصول نہیں ہو پائیں۔

بھارتی فائرنگ

سری نگر (مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارت کا ظلم نہ رک سکا، ضلع اننت ناگ میں بھارتی فوج نے مزید 2 کشمیری نوجوان شہید کر دیئے۔ 2 روز میں شہدا کی تعداد 5 ہوگئی۔مقبوضہ وادی کے ضلع اننت ناگ کے علاقے وگھاما میں سرچ آپریشن کی آڑ میں نوجوانوں کو شہید کیا گیا۔ غاصب فوج نے علاقے کو سیل کر کے گھر گھر تلاشی لی اور انٹرنیٹ موبائل سروس بند کر دی گئی۔ظالمانہ کارروائی کے خلاف کشمیریوں نے احتجاج کیا۔

کشمیری شہید

مزید :

صفحہ اول -