حکومت اور مافیا میں عوام کے خلاف اتحاد ہو چکا ہے،ڈاکٹر مرتضیٰ مغل

  حکومت اور مافیا میں عوام کے خلاف اتحاد ہو چکا ہے،ڈاکٹر مرتضیٰ مغل

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ کاروباری مافیانہ تو خلا سے آپریٹ کرتی ہے اور نہ ہی دشوار گزار پہاڑی علاقوں یانو گو ایریاز سے۔یہ حکومت کے زیر انتظام علاقوں میں دھندا کرتی ہے اور حکومت کی مرضی کے بغیر ایک دن بھی نہیں چل سکتی۔ سیاسی اشرافیہ اور مافیا ہر دور میں ایک ہی سکے کے دو رخ رہے ہیں مگر جس طرح عوام کو موجودہ وقت میں لوٹا جا رہا ہے ملکی تاریخ میں اسکی مثال نہیں ملتی۔کرپشن جنون کی صورت اختیار کر گئی ہے۔ان حالات میں اپوزیشن کا رویہ بھی انتہائی شرمناک ہے۔ ڈاکٹر مرتضیٰ مغل جوایف پی سی سی آئی مرکزی قائمہ کمیٹی برائے انشورنس کے کنوینر بھی ہیں نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ حکمران جماعت اقتدار میں رہنے کا اخلاقی جواز کھو چکی ہے۔ بھوک سے بلکتے عوام کے جاگنے سے قبل اگر حالات بہتر نہیں ہوتے تو ان حکمرانوں اور مافیا گینگ کو چھپنے کی جگہ بھی نہیں ملے گی اور بڑا خون خرابہ ہو گا۔ عوام کو مسلسل لوٹا جا رہا ہے جبکہ وزراء دو سال سے انھیں تسلیاں دینے، مستقبل کے سہانے سپنے دکھانے اور سابقہ حکومت کو کوسنے کے علاوہ کچھ نہیں کر رہے۔ ان کا بس چلے تو کرونا وائرس کا ملبہ بھی سابقہ حکمرانوں پر ڈال دیں۔حکومت نے مافیا پروری کی انتہا کر دی ہے جبکہ انھیں تبدیلی کے لئے ووٹ دینے والے منہ چھپاتے پھررہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ آٹے چینی پولٹری ادویات اور پٹرول کا حالیہ بحران کی ذمہ دار حکومت ہے جو اپنی نااہلی، بدانتظامی اور کرپشن چھپانے کے لئے ہر بحران کا لنگڑا لولا جواز پیش کر کے عوام کو مزید متنفر کر رہی ہے۔ آنے والے دنوں میں بہت سے بحران اور منی بجٹ آئیں گے اور عوام ایل پی جی بحران اور قدرتی گیس کا بحران بھگتنے کے لئے تیار رہیں۔موجودہ حکومت پاکستان کو ایشیائی ٹائیگر بنانے کا دعویٰ کرتی ہے مگر اس کے اقدامات ملک کو پتھر کے دور میں دھکیل رہے ہیں اور اس حکومت میں عوام کبھی سکون کا سانس نہیں لے سکیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -