ڈاکٹر ز کی مبینہ غفلت‘ مریض کی ہلاکت پر ورثاء کی ہسپتال مین توڑ پھوڑ

  ڈاکٹر ز کی مبینہ غفلت‘ مریض کی ہلاکت پر ورثاء کی ہسپتال مین توڑ پھوڑ

  

ملتان ( وقا ئع نگار)چلڈرن ہسپتال ملتان میں ڈاکٹر پر تشدد اور ہسپتال میں توڑ پھوڑ کرنے والے لواحقین کو فورا" گرفتار کیا جائے حکومت طبی عملے پر حملہ کرنے والوں کو سخت سزائیں دینے کا آرڈیننس جاری کرے، پائینیئر یونٹی کا احتجاجی اجلاس تفصیل کے مطابق سوموار اور منگل کی درمیانی شب رات ایک بجے تیسری منزل سے گر کر زخمی ہونے والے بچے کو نیم مردہ حالت میں چلڈرن ہسپتال لایا گیا، ڈاکٹرز نے فورا" بچے کا علاج کیا مگر تقریبا" ایک گھنٹے بعد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے بچے نے دم توڑ دیا جس کے بعد لواحقین نے ہسپتال میں توڑ پھوڑ شروع کردی(بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

اور ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر مزمل کو تشدد کا نشانہ بنایا، اس حوالے سے گزشتہ روز پائینرز یونٹی کا ہنگامی اجلاس صدر پروفیسر ڈاکٹر شاہد راو کی سربراہی میں منعقد ہوا جس میں ڈاکٹروں کی کثیر تعداد موجود تھی اس موقع پر کہا گیا کہ ڈاکٹر مزمل پر حملہ کرنے والے لواحقین کو فورا" گرفتار کیا جائے اور دہشت گردی کی دفعات کے ساتھ ایف آئی آر کا ٹی جائے اور سخت سے سخت سزا دی جائے،حکومت وقت جب تک طبی عملے کی سیکیورٹی کا بل منظور نہیں کرتی اس طرح کے واقعات ھوتے رہیں گے,ھم CPO پولیس سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ذمہ داران کو فورا" گرفتار کیا جائے بصورت دیگر ھسپتال میں کا م بند کردیا جائیگا۔

توڑ پھوڑ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -