وہ ملک جہاں کورونا کو الوداع کہنے کیلئے پارٹی سجا دی گئی ، ہزاروں افراد کی شرکت

وہ ملک جہاں کورونا کو الوداع کہنے کیلئے پارٹی سجا دی گئی ، ہزاروں افراد کی ...
وہ ملک جہاں کورونا کو الوداع کہنے کیلئے پارٹی سجا دی گئی ، ہزاروں افراد کی شرکت

  

پراگ(ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا بھرمیں کورونا وائرس سے جہاں ہزاروں لاکھوں افراد لقمہ اجل بنے ہیں وہیں اس وبا کے باعث کچھ انوکھے کام بھی دیکھنے کو ملے ہیں۔

ایسا ہی ایک اقدام جمہوریہ چیک میں دیکھنے کو ملا جہاں لوگوں نے کورونا سے جان چھڑانے کے لیے الوداعی پارٹی سجادی۔ بی بی سی کے مطابق اگرچہ 

عالمی ادارہ صحت نے رواں ہفتے خبردار کیا تھا کہ عالمی وبا ابھی ختم ہونے میں بہت وقت لگے گا تاہم یورپی ملک جمہوریہ چیک میں ایک پارٹی منعقد ہوئی جس کے ذریعے کورونا وائرس کو ’علامتی طور پر الوداع‘ کہا گیا۔

منگل کے روز ہزاروں مہمان پراگ کے چارلس برج پر ایک 500میٹر لمبے ٹیبل کے گرد جمع ہوئے اور گھر سے بنا کر لائے گئے کھانے پینے کی اشیا بانٹیں اس دوران شرکا نے سماجی دوری کے ضوابط کو بری طرح نظرانداز کیا اور انتہائی قریب قریب کھڑے ہوکر کھانا کھایا۔ 

لوگ بے فکری سے دھنیں بکھیرتے موسیقاروں سے محظوظ ہوتے رہے اور ایک دوسرے سے خوش گپیوں میں مصروف رہے۔

منتظمین کے مطابق پارٹی کا انعقاد اس لیے کرلیا گیا کیونکہ ان کے ملک میں سیاح نہ ہونے کے برابر ہیں۔

خیال رہے جمہوریہ چیک میں اب تک 12 ہزار سے زائد افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ یہ 1 کروڑ آبادی والا ملک ہے جہاں 350 افراد ہلاک بھی ہوئے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -کورونا وائرس -