وزیرہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مسترد

وزیرہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مسترد
وزیرہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مسترد

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیرہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مستردکردی گئی،اسلام آبادہائیکورٹ نے غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر فیصلہ سنادیا،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ وفاقی وزیرکے بیان سے ملک کانقصان ہواتوایکشن لیناوزیراعظم کااختیارہے۔

قبل ازیں وزیر ہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر سماعت ہوئی،اسلام آبادہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے سماعت کی ،وکیل درخواست گزار نے دلائل دیتے ہوئے کہاکہ 262 پائلٹس سے متعلق غلام سرورنے غیرذمہ دارانہ بیان دیا،پی آئی اے کی پروازوں پریورپ میں 6 ماہ کی پابندی عائدہوگئی،وزیرکوچاہئے تھاکسی کی ڈگری جعلی تھی توخفیہ کارروائی کرتے،وکیل درخواست گزار نے کہاکہ غلام سرورکی غیرذمہ دارانہ بیان بازی سے ملک کی جگ ہنسائی ہوئی۔

اسلام آبادہائیکورٹ نے غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر فیصلہ سنادیا،وزیرہوابازی غلام سرور خان کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مستردکردی گئی،چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے7صفحات پرمشتمل پرفیصلہ جاری کردیا

عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ وفاقی وزیرکے بیان سے ملک کانقصان ہواتوایکشن لیناوزیراعظم کااختیارہے،عدالت وفاقی وزیر کے احتساب کے آئینی طریقہ کار میں مداخلت سے گریز کرتی ہے،فیصلہ میں کہاگیاہے کہ درخواست گزار کے مطابق وزیر کے بیان سے ملک اور پی آئی اے کی ساکھ کو نقصان پہنچا،عدالت کے پاس یہ ماننے کا کوئی جواز نہیں کہ وزیر اعظم اور کابینہ کو معاملے کی نزاکت کا اندازہ نہیں، عدالت آرٹیکل 199 کا سہارا لے کر معاملے میں مداخلت نہیں کرنا چاہتی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -