بھارتی فورسزنے 3سالہ بچے کے سامنے نانا کو قتل کردیا لیکن معصوم بچے نے پھر کیا کیا؟ ایسی خبر کہ آنسو روکنا مشکل

بھارتی فورسزنے 3سالہ بچے کے سامنے نانا کو قتل کردیا لیکن معصوم بچے نے پھر کیا ...
بھارتی فورسزنے 3سالہ بچے کے سامنے نانا کو قتل کردیا لیکن معصوم بچے نے پھر کیا کیا؟ ایسی خبر کہ آنسو روکنا مشکل

  

سری نگر(ڈیلی پاکستان آن لائن) مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فورسزنے 3سالہ بچے کے سامنے ناناکو قتل کردیا۔بھارتی فورسز کی سفاکیت سے انجان معصوم بچے کو تو شاید موت کا بھی نہیں  پتہ تھا کہ یہ بھی کوئی چیز ہوتی ہے اس لیے وہ جاکر اپنے نانا کے اوپر ہی بیٹھ گیا جیسے کہتا ہو نانا یہاں کیوں لیٹ گئے گھر چلیں نا۔

سڑک کنارے پڑی میت پر روتا یہ بچہ غم، بے بسی اور دکھ کی ایسی منظر کشی کر رہا تھا کہ دیکھنے والوں کے دل دہل جائیں۔

انسان کا کلیجہ چیرتی یہ تصاویر  نہ صرف بھارت کا اپنا میڈیا بلکہ بین الاقوامی میڈیا بھی شیئر کررہا ہے ترک میڈیا نے اسے اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں محمد الضرہ کی شہادت کے واقعے سے مماثل قرار دیا ہے۔

یہ واقعہ کشمیر کے علاقے سوپور میں پیش آیا ہے  مقتول اپنے نواسےکے ساتھ دودھ لینے کے لیے نکلا تھا جب کہ ان کی بیٹی کا کہنا ہے کہ ان کے والد کو گاڑی سے اتار کر گولیاں ماری گئیں۔

بھارتی فورسز کی سفاکیت کی ایک بار پھر دنیا بھرمیں مذمت کی جارہی ہے اور اس بہیمانہ قتل اور بچے کی بے بسی کو دنیا میں پیش آئے تشدد کے بدترین واقعات سے جوڑا جا رہا ہے۔

یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب بھارت نے ایک جانب مقبوضہ کشمیر تودوسری جانب پاکستان اور چین سے ملحقہ سرحد پر بھی جنگی جنون اگلنے میں مصروف ہے۔

مزید :

قومی -بین الاقوامی -