ماسک پہننے کی درخواست کرنے والی خاتون کو آدمی نے دفتر میں تشدد کا نشانہ بنا دیا

ماسک پہننے کی درخواست کرنے والی خاتون کو آدمی نے دفتر میں تشدد کا نشانہ بنا ...
ماسک پہننے کی درخواست کرنے والی خاتون کو آدمی نے دفتر میں تشدد کا نشانہ بنا دیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک آدمی نے دفتر میں فیس ماسک پہننے کا کہنے پر اپنی کولیگ خاتون کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بناڈالا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست آندھراپردیش کے شہر نیلور میں پیش آیا جہاں ایک دفتر میں بھاسکر راﺅ نامی ملازم بغیر فیس ماسک کے بیٹھا ہوا تھا۔ اس کی خاتون کولیگ چکوری اشرانی نے اسے ماسک پہننے کی درخواست کی جس پر اس نے آﺅ دیکھا نہ تاﺅ اور چکوری کو پکڑ کر بہیمانہ تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

منظرعام پر آنے والی سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چکوری کے ماسک پہننے کو کہنے پر بھاسکر اپنی سیٹ سے اٹھتا ہے اور چکوری کو بالوں سے پکڑ کر گھسیٹ کر اس کی کرسی سے نیچے گرا دیتا ہے۔ جس سے چکوری کی کرسی کا بازو ٹوٹ جاتا ہے۔ بھاسکر وہی کرسی کا ٹوٹا ہوا بازو اٹھا کر اسی سے چکوری کو پیٹنا شروع کر دیتا ہے۔ یہ صورتحال دیکھ کر دفتر کا ایک عمر رسیدہ ملازم آگے بڑھ کر چکوری کو چھڑوانے کی کوشش کرتا ہے لیکن بھاسکر اسے دھکا دے کر پیچھے کر دیتا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ بھاسکر پہلے ہی چکوری کے خلاف بغض رکھتا تھا، جس کی وجہ سے اس نے یہ حرکت کی۔ چکوری نے پولیس کو واقعے کی رپورٹ کر دی ہے اور بھاسکر راﺅ کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -