سوتیلے باپ کے ساتھ مل کر13 سالہ بچی کا گینگ ریپ کرنے والا پولیس افسر

سوتیلے باپ کے ساتھ مل کر13 سالہ بچی کا گینگ ریپ کرنے والا پولیس افسر
سوتیلے باپ کے ساتھ مل کر13 سالہ بچی کا گینگ ریپ کرنے والا پولیس افسر

  

بھوبھنیشور (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست اوڈیشہ میں 13 سالہ بچی کو اس کے سوتیلے  باپ کے ساتھ مل کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے پولیس افسر کو نوکری سے برخاست کردیا گیا ۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ایک 13 سالہ بچی نے پولیس کو درخواست دی تھی کہ اس کا سوتیلا باپ اور پولیس انسپکٹر آنندا چندرا ماجھی سمیت 6 لوگ اس کے ساتھ اجتماعی زیادتی کر رہے ہیں۔ یہ سلسلہ 4 مہینے سے جاری ہے اور حاملہ ہونے پر انہوں نے بچی کا اسقاط حمل بھی کرایا ہے۔

معاملہ سامنے آنے پر بچوں کے تحفظ کی تنظیمیں متحرک ہوگئیں اور ایس پی سے ملاقات کرکے پولیس انسپکٹر کو معطل کرادیا۔ بعد ازاں چائلڈ بیورو نے معاملے کی تحقیقات کیں جس میں الزامات درست ثابت ہوئے۔ بدھ کے روز تحقیقات کو مد نظر رکھتے ہوئے پولیس انسپکٹر ماجھی کو نوکری سے برخاست کردیا گیا ہے۔ڈپٹی کمشنر اور ایس پی کے حکم پر ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -