’ہمیں حمزہ شہباز کو 17 جولائی تک وزیراعلیٰ رہنے دینے کی تجویز قبول نہیں ‘ سپریم کورٹ میں چوہدری پرویز الہیٰ اور تحریک انصاف کے درمیان اختلاف ہو گیا 

’ہمیں حمزہ شہباز کو 17 جولائی تک وزیراعلیٰ رہنے دینے کی تجویز قبول نہیں ‘ ...
’ہمیں حمزہ شہباز کو 17 جولائی تک وزیراعلیٰ رہنے دینے کی تجویز قبول نہیں ‘ سپریم کورٹ میں چوہدری پرویز الہیٰ اور تحریک انصاف کے درمیان اختلاف ہو گیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپریم کورٹ میں لاہور ہائیکورٹ کے خلاف تحریک انصاف کی درخواست پر سماعت جاری ہے جس میں چوہدری پرویز الہیٰ اور حمزہ شہباز پیش ہو گئے ہیں، پرویز الہیٰ نے بھی حمزہ شہباز کے 17 جولائی تک وزیراعلیٰ رہنے پر رضامندی ظاہر کر دی ہے لیکن تحریک انصاف کی جانب سے اس پر اختلاف سامنے آ گیاہے اور بابراعوان کا کہنا ہے کہ ہمیں یہ تجویز قبول نہیں ۔

چوہدری پرویز الہیٰ نے عدالت میں کہا کہ ان سے کہیں کہ مل بیٹھ کر بات کر لیں ، جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ وہ آپ سے مل بیٹھ کر بات کرنے کیلئے تیار نہیں ، جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ آپ حمزہ کو وزیراعلیٰ تسلیم کر لیں یا پھر دو دن دیں گے لوگ اکھٹے کر لیں ، چوہدری پرویز الہیٰ نے کہا کہ یہ معاملات طے کر لیں اور خلاف قانون گرفتاریاں نہ کریں تو پھر اعتراض نہیں ۔

جسٹس اعجاز الحسن نے کہا کہ آپ کو 17 جولائی تک وزیراعلیٰ مانتے ہیں تو دیگر چیزیں طے ہوں گی ، چوہدری پرویز الہیٰ نے کہا کہ حمزہ کو نگران وزیراعلیٰ رہنا ہے تو یہ اپنا اختیار طے کریں، یہ بادشاہ بن جاتے ہیں ۔ چوہدری پرویز الہیٰ نے رضامندی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ حمزہ شہباز 17 تاریخ کے ضمنی انتخاب تک وزیراعلیٰ رہیں ۔چیف جسٹس نے کہا کہ اگر ارکان کو ہراساں کیا جاتاہے توعدالتیں کھلی ہیں ۔

پی ٹی آئی کے اپوزیشن لیڈر سبطین خان اور درخواست گزار کے وکیل بابراعوان نے چوہدری پرویز الہیٰ کی تجویز پر کہا کہ ہمیں یہ قبول نہیں ہے ، ہم اس پر ضامند نہیں ہیں ، ہمار ی جماعت کا ق لیگ سے اتحاد ہے ، میں اپوزیشن لیڈر کا وکیل ہوں ۔چوہدری پرویز الہیٰ نے کہا کہ میں محمود الرشید کے مشورے پر ہی آمادہ ہوا ہوں ۔

چیف جسٹس نے کہا کہ پرویز الہیٰ امیدوار ہیں اگر انہیں اعتراض نہیں ہے تو پی ٹی آئی کو کیا مسئلہ ہو سکتا ہے ، ، معاشرے اور سیاست میں بہت تقسیم ہو گئی ہے ، آپ نے سات دن مانگے تھے آپ کو زیادہ دن مل رہے ہیں، اپنی درخواست پڑھیں آپ نے درخواست کیا کی ہے ، بابراعوان نے کہا کہ چیف منسٹر کو ہٹانے کی درخواست بھی کر رکھی ہے 

مزید :

اہم خبریں -قومی -