پولیس اہلکاروں کی درندگی کا نشانہ بننے والی حیدرآباد کی طالبہ نے دلبرداشتہ ہوکر خودکشی کرلی

پولیس اہلکاروں کی درندگی کا نشانہ بننے والی حیدرآباد کی طالبہ نے دلبرداشتہ ...
پولیس اہلکاروں کی درندگی کا نشانہ بننے والی حیدرآباد کی طالبہ نے دلبرداشتہ ہوکر خودکشی کرلی

  

حیدرآباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مبینہ طورپرپولیس اہلکاروں کی زیادتی کا نشانہ بننے والی بارہویں جماعت کی طالبہ نے دلبرداشتہ ہوکرخوکشی کرلی۔حیدرآباد کے علاقے لطیف آباد نمبر گیارہ بلاک ای کی رہائیشی بارہویں جماعت کی طالبہ صباح بنت اکبر خان نے اپنے گھر کے دوسرے کمرے میں گلے میں پھندا ڈال کرخودکشی کرلی جسکی لاش کو بھٹائی ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹرز نے موت کی تصدیق کردی۔ صباح کے والد اکبرخان کا کہنا ہے کہ تین روز قبل میرپورخاص اور حیدرآباد کی اے سیکشن پولیس ہمارے گھر میں داخل ہوکر میری بیٹی کو اسکی دوست عروسہ کو اغواءکرنے کے الزام میں ساتھ لے گئی اور رات بھر زیادتی کی جسکے بعد صبح جب میرپورخاص کی مقامی عدالت میں میری بیٹی کی دوست عروسہ نے بیان دیا تو صباح کو رہا کردیا گیا۔اُنہوںنے بتایاکہ واقعہ کے بعد سے صباح دلبرداشتہ تھی اور آج گھر کے دوسرے کمرے میں جاکر خودکشی کرلی ۔۔ایس ایچ او کہتے ہیں تفتیش کے بعد مقدمہ درج کیا جائیگا۔

مزید : انسانی حقوق