سعودی حکومت مساجد کی سیکیورٹی کے لئے نیا نظام متعارف کروائے گی، ڈاکٹر توفیق السدیری

سعودی حکومت مساجد کی سیکیورٹی کے لئے نیا نظام متعارف کروائے گی، ڈاکٹر توفیق ...

  

جدہ (محمد اکرم اسد / بیورو چیف) وزارت اسلامی امور سعودی عرب کی تمام مساجد میں سیکیورٹی کے لئے نیا نظام متعارف کروائے گی۔ مساجد میں امن وامان کیلئے سیکیورٹی گارڈز متعین کئے جائیں گے جبکہ سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب ہوگی، یہ بات وزارت اسلامی امور اوقاف ودعوۃ وارشاد کے سیکرٹری ڈاکٹر توفیق السدیری نے کہی، انہوں نے کہا کہ نئی تعمیر ہونے والی مساجد میں وزارت نے پہلے سے ہی سیکیورٹی کا انتظام کیا ہوا ہے جبکہ تعمیر شدہ مساجد میں نیا نظام وزارت داخلہ کے تعاون سے نافذ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مساجد کی تعمیر کے لئے جو قانون سازی 1426 ہجری میں ہوئی تھی جس کی منظوری کابینہ نے بھی دی تھی اس کے مطابق مساجد کی تعمیر میں ٹھیکیداروں اور ذاتی خرچ پر مسجد تعمیر کرنے والوں کو اس بات کا پابند بنایا گیا تھا کہ وہ مسجد کی سیکیورٹی کے انتظامات کا بھی خیال رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ متعلقہ وزارتوں اور اداروں کے باہمی مشوروں کے بعد جلد ہی تمام مساجد میں سیکیورٹی کا نظام نافذ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قطیف اور دمام کی مساجد کو نشانہ بنانے کے بعد وزارت نے تمام خطباء اور واعظموں کو پابند کیا ہے کہ وہ ہر جمعہ کے خطبوں میں رواداری اور باہم برداشت کو موضوع بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ جمعہ کے خطبوں میں نمازیوں کو توحید، عبادات اور اعتدال کی ہدایت کی جائے۔ شہریوں کو بتایا جائے کہ حکمران کے کیا حقوق ہیں شہریوں پر اپنے حکمرانوں کی اطاعت لازمی ہے، فتنوں سے بچنے کے کیا طریقہ کار ہیں اور فتنوں کے زمانے میں کس طرح سے علماء اور حکمرانوں کی اطاعت کی جاتی ہے۔ دشمن ملک میں فرقہ واریت ہو ہوا دینے کی سازشیں کررہا ہے۔ علماء کو چاہیے کہ وہ شہریوں کو اتحاد اور یکجہتی کی تلقین کرتے ہوئے شدت پسند کی تمام شکلوں کو مذکت کریں۔ ہر سطح پر لوگوں کو تربیت کی جائے اور انہیں انتہا پسندی سے دور رکھا جائے۔

مزید :

علاقائی -