مقبوضہ کشمیر میں پاکستانی پرچم لہرانے پر پولیس کے چھاپے چار گرفتار مسلمانوں کی جائیدادوں پر قبضے شروع

مقبوضہ کشمیر میں پاکستانی پرچم لہرانے پر پولیس کے چھاپے چار گرفتار مسلمانوں ...
مقبوضہ کشمیر میں پاکستانی پرچم لہرانے پر پولیس کے چھاپے چار گرفتار مسلمانوں کی جائیدادوں پر قبضے شروع

  

سرینگر(آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں کشمیری نوجوانوں کی طرف سے ایک ریلی کے دوران پاکستانی پرچم لہرانے کے ایک روز بعد بھارتی پولیس نے ضلع اسلام آباد کے مختلف علاقوں میں متعدد نوجوانوں کے گھروں پر چھاپے مارے اور 4نوجوانوں کو گرفتار کرلیا جبکہ درجنوں نوجوان گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش ہوگئے ہیں۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی پولیس نے اسلام آباد قصبے اور ضلع کے دیگر علاقوں میں نوجوانوں کے گھروں پر چھاپے مار کر انہیں گرفتار کر لیا اور ان پر پاکستانی پرچم لہرانے اور پاکستان کے حق میں نعرے بازی کرنے کا الزام لگایا۔ علاقے کے لوگوں کا کہنا ہے کہ بھارتی پولیس روپوش نوجوانوں کے بدلے ان کے دیگر رشتے داروں کو گرفتار کررہی ہے۔ اسلام آباد قصبے میں تھانہ صدرکے ایس ایچ او کا کہنا ہے کہ پاکستانی پرچم لہرانے میں ملوث نوجوانوں کی نشاندہی کرکے ان کے خلاف کیس درج کئے جائیں گے۔حریت کانفرنس نے چھاپوں اور گرفتاریوں کی مذمت کی ہے۔ دوسری جانب کٹھ پتلی انتظامیہ نے جموں خطے کے مسلمانوں کے خلاف معاندانہ سرگرمیوں کا سلسلہ تیز کرتے ہوئے مختلف اوچھے ہتھکنڈوں کے ذریعے انہیں اپنی جائیدادوں سے بے دخل اور انکی املاک پر قبضہ کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ میڈیا رپو رٹ کے مطابق جموں خطے میں تعلیم ،دیہی ترقی اور دیگر اہم محکموں میں انتہا پسند ہندو افسروں کی تعیناتی کا عمل بھی شروع کر دیا گیا ہے۔ قابض انتظامیہ کے ان یکطرفہ، جانب دارانہ اور مسلمان مخالف اقدام کے باعث جموں خطے کے مسلمانوں میں عدم تحفط کا احساس بڑھ گیا ہے اور وہ خود کو غیر محفوظ سمجھنے لگے ہیں۔ جموں میں محکمہ جنگلات نے سنجوان، بٹنڈی، رخیا، سدھرااور دیگر علاقوں سے مسلمانوں کو بے دخل کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں9 برس قبل بھارتی بحریہ کے اہلکاروں کی مجرمانہ غفلت کی وجہ سے وولر جھیل میں ڈوب کر جاں بحق ہونے والے بچوں کے والدین کو انصاف نہ مل سکا۔انہوں نے سانحے میں ملوث اہلکاروں کے خلاف فوری کارروائی کامطالبہ کیا ہے۔سینئر حریت رہنما سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ کشمیری عوام ریلیوں میں پاکستان کا پرچم لہراتے رہیں گے، گھر پر ایک تقریب سے خطاب کرتے انہوں نے کہا کہ پاکستان ہمارا پڑوسی اور کشمیریوں کا خیر خواہ ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -