دو بیویوں کا ستایا احتجاجاً منہ کالا کرکے گھومتا رہا

دو بیویوں کا ستایا احتجاجاً منہ کالا کرکے گھومتا رہا
دو بیویوں کا ستایا احتجاجاً منہ کالا کرکے گھومتا رہا

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک) دو بیویوں کے ستائے باریش شخص نے احتجاجاً منہ کالا کرکے گلے میں جوتوں کا ہار ڈال کر گاؤں میں شیدائی بن کر گھومتا رہا۔ چک نمبر 199ج ب رحموآنہ کے رہائشی ا للہ دتہ نے کچھ عرصہ قبل شازیہ سے شادی کی مگر کچھ عرصہ بعد اختلافات کے بعد اس نے زبانی طور پر شازیہ بی بی کو طلاق دے دی اور دوسری شادی کرلی۔

جس پر شازیہ بی بی اپنے ماں باپ کے گھر چلی گئی مگر دو ماہ بعد ہی شازیہ نے دوبارہ اللہ دتہ سے کہا کہ وہ حلالہ کر کے اس کا گھر پھر سے بسائے مگر اللہ دتہ نے انکار کردیا۔ جس پر شازیہ نے اہل علاقہ اور بااثر لوگوں کے ذریعے اللہ دتہ کو ڈرانا دھمکانا شروع کردیا مگر اللہ دتہ پھر بھی اس کے ساتھ گھر بسانے پر راضی نہ ہوا اور شازیہ بی بی نے مبینہ طور پر اپنے الٹے سیدھے ہتھکنڈے جاری رکھے۔ جس پر ذہنی طور پر تنگ آکر اپنی سابق بیوی کے رویہ سے دلبرداشت ہوکر اللہ دتہ نے اپنا منہ کالا کرکے گلے میں جوتوں کا ہار ڈال کر پورے گاؤں میں چکر لگانا شروع کردیا اور ساتھ میں اہل گاؤں کو دوہایاں دیتا رہا کہ اس کی شازیہ بی بی سے جان بخشی کرائی جائے، دوسری جانب اللہ دتہ کا بیان تھا کہ اس نے شازیہ بی بی کے رویہ سے تنگ آکر وہ ایسا اقدام کرنے پر مجبور ہوا ہے۔

مزید :

فیصل آباد -