راناثنا اللہ کے حلقے میں ایک ہی دکان کا تین بار صفایا ، پولیس ڈاکوؤں کو پکڑنے میں ناکام

راناثنا اللہ کے حلقے میں ایک ہی دکان کا تین بار صفایا ، پولیس ڈاکوؤں کو ...
راناثنا اللہ کے حلقے میں ایک ہی دکان کا تین بار صفایا ، پولیس ڈاکوؤں کو پکڑنے میں ناکام

  


فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر قانون پنجاب راناثنا اللہ کے حلقے میں لاقانونیت انتہاؤں کو چھونے لگی ۔ 2 ڈاکوو¿ں نے 4 ماہ کے دوران ایک ہی دکان کو تین بار لوٹ لیا لیکن واضح ویڈیو موجود ہونے کے باوجود پولیس ڈاکوؤں کو پکڑنے میں ناکام ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر قانون پنجاب راناثنا اللہ کے حلقے ڈجکوٹ روڈ پر ہارڈ ویئر کی دکان میں 2 فروری 2016 کو 2 ڈاکو آئے اور دکان کا صفایا کرکے چلتے بنے ۔ دکانداروں نے واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج پولیس کے حوالے کی جس میں ڈاکوؤں کے چہرے با آسانی دیکھے جاسکتے ہیں لیکن پولیس اتنی واضح نشاندہی کے باوجود ڈاکوؤں کو پکڑنے میں ناکام رہی ۔

زیر نظر تصویر میں ہارڈ ویئر کی دکان میں ہونے والی پہلی ڈکیتی کا منظر

پولیس کی مجرمانہ ناکامی کے بعد 29 اپریل 2016 کو دوسری بار وہی ڈاکو دوبارہ اسی دکان کو لوٹ کر چلتے بنے لیکن اس بار بھی پولیس واضح ویڈیو کے باوجود ڈاکوو¿ں کو پکڑنے میں ناکام رہی ۔ ایک ہی دکان کو 2 بار لوٹنے کے بعد بھی ڈاکوؤں کی تسلی نہ ہوئی اور انہی دونوں ڈاکوؤں نے تیسری بار وزیر قانون پنجاب کے حلقے میں قانون کو چیلنج کرتے ہوئے اسی ہارڈ ویئر کی دکان کا رخ کیا اور دکان کو لوٹ کر چلتے بنے اور پہلے کی طرح تیسری بار بھی پولیس ڈاکوو¿ں کو پکڑنے میں ناکام نظر آرہی ہے ۔

زیر نظر تصویر میں ہارڈ ویئر کی دکان میں ہونے والی دوسری ڈکیتی کا منظر دیکھا جاسکتا ہے

دکان کے لٹنے کی ہیٹ ٹرک مکمل ہونے کے بعد تاجروں نے پولیس اور وزیر قانون پنجاب کے خلاف شدید احتجاج کیا اور کہا کہ وزیر قانون اپنے حلقے میں لوگوں کو تحفظ فراہم نہیں کرسکتے تو انہیں کوئی حق نہیں ہے کہ 10 کروڑ سے زائد کی آبادی کے صوبے کے تحفظ کے دعوے کریں۔ مظاہرین نے رانا ثنا اللہ سے فوری طور پر استعفیٰ اورپولیس کے اعلیٰ حکام سے ڈاکوؤں کی فوری گرفتاری کا بھی مطالبہ کیا ۔

زیر نظر تصویر میں ہارڈ ویئر کی دکان میں ہونے والیتیسری ڈکیتی کا منظر واضح دیکھا جاسکتا ہے

مزید : فیصل آباد