2016 نواز شریف کی سیاسی فاتحہ خوانی کا سال ہو گا: شیخ رشید

2016 نواز شریف کی سیاسی فاتحہ خوانی کا سال ہو گا: شیخ رشید
2016 نواز شریف کی سیاسی فاتحہ خوانی کا سال ہو گا: شیخ رشید

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) عوامی مسلم لیگ کے صدر شیخ رشید نے کہا ہے کہ ملک میں سقوطِ ڈھاکہ کے بعد پہلی بار اتنا بڑا بحران ہو ا ہے۔ ملک کے سیاسی ، معاشی استحکام میں شگاف پڑنے والا ہے۔ تمام سیاستدانوں میں سے صرف شیخ رشید ، گوہر ایوب اور ظفر الحق ایٹمی دھماکے کے حق میں تھے۔ باقی سب کی کی ٹانگیں کانپ رہی تھیں۔ دنیا نیوز کے پروگرام ٹونائٹ ود معید پیرزادہ میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ امریکہ نے سارے خطے میں اسلامی دنیا کو تباہ بربار کر رکھا ہے۔ پاکستان کا جی ڈی پی بہت کم ہے ۔ چین کے 46 بلین ڈالر بھی لے لیں تو پھر بھی جی ڈی پی کم رہے گا۔ جنہوں نے بھی پاکستان سے باہر اپنا سرمایہ رکھا ہو اہے وہ پاکستان کے ساتھ غداری کر رہے ہیں۔ سی پیک کی کامیابی کیلئے سول اور ملٹری قیادت کو ایک ہونا پڑے گا ۔ شیخ رشید نے بلاول بھٹو سےہونے والی ملاقات کے بارے میں کہا کہ ان سے ملا قات محض اتفاقیہ تھی۔ تاہم بلاول بھٹو کے بارے میں میری رائے تبدیل ہوئی ہے۔ بلاول بھٹو اور آصف زرداری کی سوچ میں زمین و آسمان کا فرق ہے۔ بلاول بھٹو ہی آصف زرداری کا پاکستان میں آنے کا راستہ صاف کر سکتے ہیں۔ شیخ رشید نے کہا کہ پانامہ لیکس پر تحقیقات کے حوالے سے کمیشن کیلئے ٹی اوآرز کے مسئلے پر مذہبی سیاسی جماعتیں عید کے بعد باہر نکلیں گی۔ لگتا ہے 2016 نواز شریف کے سیاسی فاتحہ خوانی کا سال ہو گا ، نواز شریف کبھی بھی شہباز شریف کو آگے نہیں لائیں گے۔ سیاسی بٹوارہ اس خاندان میں بھی ممکن ہے ۔ جمہوریت اسی صورت میں بچ سکتی ہے جب شہباز شریف یا چوہدری نثار آجائیں۔ ورنہ ضرورت برائے جمہوریت کا اشتہار لگا ہوگا۔ لیکن نواز شریف ، کلشوم نوازیا اسحاق ڈار کے علاوہ کسی کو وزیراعظم نہیں بنانا چاہتے۔ شہباز شریف فوج کو ماموں بنا رہے ہیں اور گولیاں دے رہے ہیں۔ فوج نے ملک ٹوٹنے کے عمل کو لمبا کر دیا ہے۔ پاکستان میں کوئی ایسا لیڈر نہیں جس پر قوم اندھا اعتماد کر سکے۔ جس ملک کا مذہبی لیدر فضل الرحمن جیسا ہو اس کا کیا ہوگا؟ تمام لیڈر 65 کو عمر سے آگے جا چکے ہیں ۔ ایک ہی سال ان سب کی اموات کا سال ہو گا۔ ان کے منہ سے کچھ گرے گا تو غریب کے بچے کھائیں گے ۔ شیخ رشید نے کہا کہ امریکی مطلب پرست لوگ ہیں۔ پہلے ضیا الحق کو افغان سوویت جنگ میں ماموں بنایا پھر مطلب پورا ہوا تو ان کے جہاز کو ہوا میں پھاڑ ا۔

مزید : اسلام آباد