’مردوخواتین کو یہ ایک عادت تیزی سے بانجھ بنادیتی ہے‘ ڈاکٹروں نے سخت ترین وارننگ جاری کردی

’مردوخواتین کو یہ ایک عادت تیزی سے بانجھ بنادیتی ہے‘ ڈاکٹروں نے سخت ترین ...
’مردوخواتین کو یہ ایک عادت تیزی سے بانجھ بنادیتی ہے‘ ڈاکٹروں نے سخت ترین وارننگ جاری کردی

  


ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) ہم سب جانتے ہیں کہ تمباکو نوشی درجنوں خطرناک بیماریوں کا سبب بنتی ہے لیکن اس کے باوجود اکثر لوگ اس بدعادت سے چھٹکارا نہیں پاسکتے۔ ایسے لوگوں کے لئے یقینا یہ بات لمحہ فکریہ ہے کہ تمباکو نوشی کئی دیگر بیماریوں کے علاوہ اولاد سے محرومی کا سبب بھی بن سکتی ہے۔

نیوز سائٹ ایمریٹس 247 کے مطابق برن ہال فرٹیلٹی کلینک دبئی کے ماہر تولیدی صحت ڈاکٹر ڈیوڈ رابرٹ سن کا کہنا ہے کہ متعدد تحقیقات سے ثابت ہوچکا ہے کہ تمباکونوشی مردوں اور خواتین کی تولیدی صحت کے لئے نقصان دہ ہے اور بانجھ پن کا سبب بن سکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ تمباکونوشی کئی طرح سے کی جاتی ہے، لیکن خصوصی سگریٹ اور شیشہ پینے والے بانجھ پن کے خطرے سے دوچار ہیں۔ ڈاکٹر ڈیوڈ نے انکشاف کیا کہ ایک گھنٹہ شیشہ پینا ایک ڈبی سگریٹ پینے کے مترادف ہے، لہٰذا یہ سگریٹ سے بھی زیادہ خطرناک عادت ہے۔

سگریٹ کا وہ فائدہ جس سے آپ اب تک لاعلم تھے

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ایک سگریٹ کے ساتھ آپ کے جسم میں 7ہزار سے زائد کیمیکل داخل ہوتے ہیں جن میں سے اکثر زہرےلے ہوتے ہیں۔ یہ کیمیکل خواتین میں بیضہ پیدا کرنے کی صلاحیت میں رکاوٹ پیدا کرتے ہیں، بیضے میں جینیاتی خرابیاں پیدا کرتے ہیں اور وقت گزرنے کے ساتھ یہ مسائل بانجھ پن کی صورت اختیار کرجاتے ہیں۔

اسی طرح مردوں میں سگریٹ نوشی سپرم کی صحت کو متاثر کرتی ہے ، سپرم میں جینیاتی خرابیاں پیدا کرتی ہے، اور وقت گزرنے کے ساتھ سپرم کی افزائش بہت کم رہ جاتی ہے جس کا نتیجہ بانجھ پن کی صورت میں سامنے آتا ہے۔

ڈاکٹر ڈیوڈ نے اولاد کی پیدائش میں تاخیر سے دوچار جوڑوں کو مشورہ دیا کہ وہ کسی اور علاج سے پہلے تمباکونوشی کو ترک کرکے دیکھیں، اور خصوصاً اگر بانجھ پن کا علاج کروانا چاہتے ہیں تو یقینی بنائیں کہ اس سے کم از کم تین ماہ قبل تمباکونوشی کو مکمل طور پر ترک کردیں۔

مزید : تعلیم و صحت