کراچی‘ اینگرو کارپوریشن کا دوسراقدرتی گیس ٹرمینل قائم کرنے کا فیصلہ

کراچی‘ اینگرو کارپوریشن کا دوسراقدرتی گیس ٹرمینل قائم کرنے کا فیصلہ

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان کی دوسری بڑی فرٹیلائزر بنانے والی کمپنی اینگرو کارپوریشن نے دوسراقدرتی گیس ٹرمینل قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس سے بجلی کی طلب میں اضافہ ہوگا اور اقتصادی حالت میں بہتری پیدا ہوگی۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر خالد سراج سبحانی نے اس ضمن میں بتایاکہ حکمت عملی طے کی گئی ہے کہ 700 ملین ڈالر کے حوالے سے 450 میگاواٹ LNG فیولڈ پاور پلانٹ تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اینگرو انرجی اور فرٹیلائزر کے میدان میں سرمایہ کاری بھی کررہی ہے اور ہماری رائے یہ ہے کہ اسے مزید مضبوط بنانے کیلئے اس میں توسیع کی جائے ۔ خالد سراج سبحانی نے کراچی میں کہا ہے کہ پاکستان ایک تجارتی مرکز ہے اور یہاں پر کئی ایسے مراحل ہیں جن پر ہم کام کررہے ہیں لیکن شفٹ جوکہ توانائی کے حوالے سے شروع کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اینگرو یہ چاہتا ہے کہ جنوبی ایشیاء میں دوسری بڑی اقتصادی کمپنی کے طور پر توانائی کے بحران سے نمٹا جائے۔ وزیر اعظم نواز شریف کے پاس یہ موقع ہے کہ وہ دو سال کی مختصر مدت میں اسے مکمل کریں اس کے علاوہ ہمارا ملک چینی سرمایہ کاری کی مدد سے پاور پلانٹ تعمیر کررہا ہے اور ملک کے پہلے بڑے ایل این جی ٹرمینل کی بلڈنگ کا کام گزشتہ سال گیس کی سپلائی کے حوالے سے شروع کردیا گیا۔

پچھلے 18 گھنٹوں میں کراچی کے اندر لوگوں نے سڑکوں پر احتجاج کیا جبکہ قدرتی گیس کی پیداوار کیلئے کمپنیاں دباؤ ڈال رہی ہیں۔ ملک میں بجلی کی پیداوار کا تناسب 16000 میگاواٹ ہے جبکہ گرمی کے موسم میں تقریباً 5000 میگاواٹ کے قریب کمی واقع ہوتی ہے۔ خالد سراج سبحانی نے بتایا کہ 2 بلین ڈالر منصوبہ کیلئے سائٹ پر دوسو چائنیز ورکرز کے ساتھ تعمیرات کا کام شروع کردیا گیا ہے اور یہ منصوبہ چائنا پاکستان کی اقتصادی ترقی کا ایک حصہ ہے جس میں چائنیز بینک سے تقریباً 820 ملین ڈالر کا قرضہ بھی شامل ہے۔ اس وقت کمپنی نے فرٹیلائزر کاروبار سے اپنی کل آمدنی کا نصف حصہ شامل کیا ہے جوکہ کھانے کے حوالے سے 3اور پاور کے لحاط سے 7 فیصد کم ہے جس کا ڈیٹا بلومبرگ نے مرتب کیا ہے۔ #

مزید : کامرس