میڈیا پر اسلام اور نظریہ پاکستان کو پروان چڑھانے کی ضرورت ہے،معصوم نقوی

میڈیا پر اسلام اور نظریہ پاکستان کو پروان چڑھانے کی ضرورت ہے،معصوم نقوی

لاہور(خبر نگار خصوصی) جمعیت علما پاکستان نیازی کے سربراہ قائد اہل سنت پیر سید محمد معصوم حسین نقوی نے پیمرا قوانین کے نفاذ کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ میڈیا سے فحاشی و عریانی اور جرائم کی ترغیب دینے والے پروگراموں کو ختم کرکے اسلام اور نظریہ پاکستان کو پروان چڑھانے کی ضرورت ہے۔ میڈیا کے پروگراموں کی اصلاح نہ کی گئی آئندہ نسلوں کو منہ دکھانے کے قابل نہیں رہیں گے۔ اسلامی اقدار کے فروغ کے لئے پاکستانی میڈیا کو اسلامی جمہوریہ ایران کے ذرائع ابلاغ سے سیکھنا چاہیے، جنہوں نے علما کی نگرانی میں ایسی میڈیا پالیسی تشکیل دی ہے کہ نئی نسل قرآن و سنت کی دلدادہ ہورہی ہے۔جے یو پی نیازی کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر امجد حسین چشتی اور مرکزی سینیر نائب صدر پیر اختر رسول قادری سے گفتگو کرتے ہوئے پیر معصوم نقوی نے کہا کہ پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کے چیرمین ابصا ر عالم مبارکباد کے مستحق ہیں۔

کہ جنہوں نے ذرائع ابلاغ کی اصلاح کا عمل شروع کیا ہے۔ یہ بہت ضروری تھا۔

جس کی طرف توجہ نہیں دی جارہی تھی کہ جرائم کی منظر کشی سے جہاں برائی معاشرے میں پھیلتی تھی ،وہیں بچوں کے ذہنوں پر اس کے منفی اثرات مرتب ہوتے تھے، پیمرا نے اگرچہ دیر سے توجہ دی ہے، لیکن بہت اچھا اقدام کیا گیا ہے، اسے عام لوگوں اور خاص طورپر والدین نے سراہا ہے۔ ان کا کہنا تھاکہ میڈیا نے بے شک بڑی ترقی کی ہے، مگر اس کی اصلاح کی طرف کسی نے توجہ نہیں دی۔ نجی چینلز پراکثرمارننگ شوز میں جس طرح کے پروگرام پیش کئے جارہے ہیں، ان کی اصلاح کی شدیدضرورت ہے۔ کسی بھی ٹیلی ویژن پر معلومات عامہ اور سائنس و ٹیکنالوجی کے فروغ کے حوالے سے پروگرام نظرنہیں آرہے ، ان اصلاح کے لئے والدین کو بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔ پیر معصوم نقوی نے کہا کہ اسلامی اقدار کے فروغ کے لئے پاکستانی میڈیا کو اسلامی جمہوریہ ایران کے ذرائع ابلاغ سے سیکھنا چاہیے، جنہوں نے علما کی نگرانی میں ایسی میڈیا پالیسی تشکیل دی ہے کہ انقلاب اسلامی دن بدن مضبوط ہوا ہے اور نئی نسل عریانی و فحاشی کی بجائے ، قرآن و سنت کی دلدادہ ہورہی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4