3ماہ کی یکشمت فیسیں وصول کرنیولے نجی تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کیخلاف کارروائی کا حکم

3ماہ کی یکشمت فیسیں وصول کرنیولے نجی تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کیخلاف ...

 لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ نے گرمیوں کی چھٹیوں میں بچوں سے تین ماہ کی یکمشت فیسیں وصول کرنے والے نجی تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کے خلاف کاروائی کا حکم دے دیا.جسٹس علی اکبر قریشی نے یہ حکم شبیرالزمان کی درخواست پرجاری کیا۔عدالتی سماعت کے موقع پر درخواست گزار نے عدالت کو آگاہ کیا کہ آئین کے آرٹیکل پچیس اے کے تحت شہریوں کو مفت تعلیم کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے.ریاست اپنی ذمہ داری ادا کرنے میں بری طرح ناکام دکھائی دے رہی یے جبکہ نجی تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم طلباء کو گرمیوں کی چھٹیوں کے آغاز سے ہی تین ماہ کی یکمشت فیسوں کی ادائیگی کے حوالے سے دباؤ کا سامنا ہے .انہوں نے بتایا کہ یکمشت فیسیں ادا نہ کرنے والے طا لب علموں کا نام سکول سے خارج کرنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں جو والدین اور طلباء کے لئے اذیت سے کم نہیں.ڈپٹی سیکرٹری سکولز ایجوکیشن نے عدالت کو بتایا کہ محکمہ تعلیم کوابھی تک تین ماہ کی اکھٹی فیس وصول کرنے سے متعلق کوئی شکایات موصول نہیں ہوئی.جس پر عدالت نے گرمیوں کی چھٹیوں میں سکول کے بچوں سے تین ماہ کی یکمشت فیسیں وصول کرنے والے تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کے خلاف کاروائی کا حکم دے دیا.عدالت نے یکشمست فیسیں وصول کرنے کے خلاف جاری نوٹیفیکیشن کی ٹی وی اور اخبارات میں تشہیر کرنے کا بھی حکم دے دیا.عدالت نے نجی سکولوں کے مرکزی دروازوں پہ بھی نوٹیفیکیشن کی کاپیاں چسپاں کرنے کی ہدائت کرتے ہوئے دو ہفتوں میں عمل درآمد رپورٹ طلب کر لی.

مزید : علاقائی