سرگودھا، پولیس مقابلے میں دو خطرناک اشتہاریوں سمیت 4ڈکیت ہلاک

سرگودھا، پولیس مقابلے میں دو خطرناک اشتہاریوں سمیت 4ڈکیت ہلاک

سرگودھا(بیورو رپورٹ) سرگودھا کے قریبی قصبے مڈھ رانجھا کے علاقے میں پولیس مقابلے میں ریڈ بک میں شامل دو خطرناک اشتہاریوں سمیت چار ڈکیت جاں بحق، جن میں اﷲ یار عرف یارا، اس کا بیٹا بلال اور بھتیجے اسد وقاص اور بابر علی شامل ہیں، اسد وقاص اور بابر علی کے سر کی قیمت حکومت نے 20، 20 لاکھ روپے مقرر کر رکھی تھی، ملزمان کے دیگر ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے، ورثاء کی جانب سے میتیں وصول نہ کرنے پر انہیں لاوارث قرار دے کر شہر کے بڑے قبرستان میں امانتاً دفن کر دیا گیا، گزشتہ شب 8 مسلح ڈاکو دیواریں پھلانگ کر محلہ اسلام آباد کوٹمومن کے رہائشی سکندر عباس کے گھر میں داخل ہو گئے، اہل و عیال گھر کے صحن میں سوئے ہوئے تھے۔ اور تمام اہلخانہ کو اسلحہ کے زور پر یرغمال بنا لیا۔ دو مسلح ملزمان اہلخانہ کے اوپر کھڑے رہے جبکہ باقی چھ نے کمرے کھول کر تلاشی لینی شروع کردی اور کمروں سے سامان ، نقدی کل مالیتی2607000 روپے زبردستی نکال لئے ۔ کمروں اور صحن میں بجلی کا بلب جل رہا تھا ۔ ملزمان نے تمام اہلخانہ کو ایک کمرہ میں بند کردیا اور جاتی دفعہ دو چھینے ہوئے موبائل بھی پھینک گئے۔ ملزمان کو معہ اہلخانہ بخوبی شناخت کرسکتے ہیں۔ اطلاع وقوعہ پاکر ایس ڈی پی او کوٹمومن ، ایس ایچ اوکوٹمومن معہ نفر ی موقعہ پر پہنچ کر ضلع بھر میں ناکہ بندی کرواکر ملزمان کی گرفتاری اور مال مسروقہ کی برآمدگی کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل د ی گئیں۔ اطلاع وقوعہ مقدمہ نمبر 338 مورخہ 31.05.16 جرم 395ت پ تھانہ کوٹمومن پاکر گل حمید خان ایس ایچ اوتھانہ مڈھ رانجھا نفری کے ساتھ مقدمہ مذکور میں ملزمان کی تلاش و گرفتاری کے سلسلہ میں سرکاری گاڑیوں پر تقریباً ڈیڑھ بجے رات پُل بڈھی سیم بحد رقبہ گھلا پور پہنچے تو سامنے سے چار موٹر سائیکلوں کی لائٹیں جن کو با امداد ہمرائیاں بذریعہ ٹارچ رکنے کا اشارہ کیا تو 8 موٹر سائیکل سواروں نے بڈھی سیم کے ساتھ اچانک موٹر سائیکلو ں کو موڑ لیا اور ساتھ ہی پولیس پارٹی پر سیدھی فائرنگ شروع کر دی جن کو با آواز بلند اسلحہ پھینکنے اور گرفتاری دینے کا کہا گیا جنہوں نے پولیس پارٹی پر فائرنگ جاری رکھی پولیس پارٹی نے بھی حفاظت خود اختیاری کے تحت فائر کیے ملزمان نے بڈھی سیم کے ساتھ 2موٹر سائیکل پھینک دیے اور دوسرے موٹر سائیکلوں پر سوار ملزمان نے تھوڑی دور جا کر موٹر سائیکل کھڑے کر لیے اور پولیس پارٹی پر فائرنگ شروع کر دی۔ جس پر ایس ایچ اوتھانہ مڈھ رانجھا نے بذریعہ وائرلیس مزید نفری طلب کی ۔ اتنے میں ایس ایچ اوتھانہ کوٹمومن، ایس ایچ اوتھانہ میلہ ، ایس ایچ اوتھانہ لکسیاں ، ایس ایچ اوتھانہ بھاگٹانوالہ اپنی اپنی نفری کے ساتھ موقع پر پہنچ گئے اور ملزمان کو اسلحہ پھینکنے اور گرفتاری دینے کا کہا ۔ فائرنگ کا یہ سلسلہ تقریباًً 35منٹ فائرنگ جاری رہا۔ دو موٹر سائیکلوں پر سوار ملزمان فائرنگ کرتے ہوئے کچہ راستہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ وہ فائرنگ کرتے گئے ملزمان کی طرف سے فائرنگ رکنے پر بذریعہ سرچ لائٹ سرچ شروع کی گئی تو بڈھی سیم کے ساتھ کچھ فاصلے پر ایک شخص کی نعش پڑی ہوئی ملی جس کو ایس ایچ او تھانہ لکسیاں اور سب انسپکٹر محمد ریاض نے اللہ یار عرف یارا ولد سرجا قوم مسلم شیخ سکنہ میانہ کھوہ کو شناخت کیا قریب ہی پڑی ہوئی ایک عدد کلاشنکوف معہ میگزین جس میں سے سات گولیاں برآمد ہوئیں اور ساتھ ہی پڑا ہوا ایک عدد جھولا برنگ سیاہ جس میں 2خالی کلاشنکوف کی میگزینیں ملیں اور جھولہ سے 23عدد کلاشنکوف کی گولیاں ملیں ۔ نعش کے قریب بکھرے ہوئے 53کلاشنکوف کی گولیوں کے خول ملے ۔ مزید آگے سرچ کرنے پر ایک اور نعش ملی جو بلال احمد ولد اللہ یار ا قوم مسلم شیخ سکہ میانہ کھوہ کے نام سے شناخت ہوئی۔ نعش کے قریب پڑی ہوئی ایک عدد کلاشنکوف اور جھولا ملا۔ کلاشنکوف کی میگزین ان لوڈ کرنے پر میگزین سے 5گولیاں کلاشنکوف جھولا میں سے 3 ضرب خالی میگزین کلاشنکوف اور 21 گولیاں کلاشنکوف ملیں اور نعش کے قریب بکھرے ہوئے 61کلاشنکوف کی گولیوں کے خول ملے۔ مزید سرچ کرنے پر کچھ فاصلے پر ایک نعش ملی جو اسد وقاص ولد محمد ریاض قوم مسلم شیخ سکنہ میانہ کھوہ کے نام سے شناخت ہوئی۔ کے قریب پڑا ایک پسٹل ۳۰ بور ملام جس میں سے 2 گولیاں ملیں ۔ نعش کے قریب بکھرے ہوئے 17پسٹل ۳۰ بور کی گولیوں کے خول ملے ۔ مزید سرچ کرنے پر کچھ فاصلے پر ایک اور نعش ملی جو بابر علی ولد محمد نواز قوم مسلم شیخ سکنہ میانہ کھوہ سے شناخت ہوئی۔ نعش کے قریب پڑی ہوئی بندوق بارہ بور ڈبل بیرل نالیاں کٹی ہوئیں ملی اور جھولا برنگ خاکی ملا جس میں سے 9عدد کارتوس بارہ بور ملے اور نعش کے قریب بکھرے ہوئے 37خول کارتوس 12بور ملے ۔ مزید کچھ فاصلے پر ایک بندوق بارہ بور رپیٹر ملی جس کے قریب بکھرے ہوئے 59خول کارتوس بارہ بور ملے ۔ کچھ فاصلہ پر 2عدد موٹرسائیکل جن میں ایک ہنڈا 125 بلا نمبر ماڈل2015ء اور دوسرا موٹر سائیکل ہنڈا 70 ماڈل 2006ء ملے۔ مزید کچھ فاصلے پر 2سیاہ بیگ ملے جن کی تلاشی لینے پران میں سے ایک توشیبا کا لیپ ٹاپ ، ایک LCD ٹی وی ، ایک کمپیوٹر معہ کی بورڈ ، طلائی زیورات جن میں سے 16طلائی انگوٹھیاں زنانہ ، 14طلائی انگوٹھیاں مردانہ ، 18طلائی چوڑیاں زنانہ ، 8زنانہ کڑے ، 7جوڑیاں بڑے کانٹے طلائی ، 8 شیشے کی چوڑیاں ، ایک طلائی کڑا مردانہ جن کا کل وزن 37/38تولے ، کپڑے سلے ان سلے 24سوٹ ، 2 چھوٹے پھول دارپرس زنانہ ، ایک بڑا زنانہ پرس ، ایک پرس زنانہ ، 2 کلپ پلاسٹک زنانہ ، 2 جھمکے پلاسٹک زنانہ ، نقد رقم مبلغ 427000 روپے برآمد ہوئے ۔ اللہ یار عرف یارا ، بلال احمد، اسد وقاص، بابر علی اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے جاں بحق ہوئے۔ ہلاک ہونے والے ڈکیت مجرمان اشتہاری بابر، اسد وقاص، اللہ یار اور بلال جو کہ ڈکیتی، راہزنی معہ قتل ، ڈکیتی ،راہزنی ، اقدام قتل، پولیس مقابلے کے 27 مقدمات میں مطلوب تھے۔ جبکہ بابر اور اسد وقاص مجرمان اشتہاریوں کی 20 لاکھ ہیڈ منی کے سلسلہ میں کیس ہوم ڈیپارٹمنٹ میں جمع ہے۔ انھوں نے اپنا ایک منظم گینگ مراتب علی گینگ کے نام سے بنایا ہوا تھا جو کہ انتہائی خطرناک اشتہاری تھے اور علاقہ میں دہشت کی علامت سمجھے جاتے تھے اور ان کی دہشت کی وجہ سے لوگوں نے درجنوں واقعات کے مقدمے بھی درج نہیں کروائے۔ فرارہونے والے ساتھیوں کے خلاف درج کر لیا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول