دبئی کی سڑک پر 3 عرب شہریوں نے پاکستانی ٹرک ڈرائیور کو روکا، ٹرک سے نکالا اور مار مار کر لہو لہان کردیا، معاملہ عدالت پہنچا تو جج نے کیا فیصلہ سنایا؟ جان کر تمام پاکستانیوں کے پیروں تلے واقعی زمین نکل جائے گی، آئندہ کبھی عرب ملک کی عدالت کا رُخ کرنے کا بھی نہ سوچیں گے

دبئی کی سڑک پر 3 عرب شہریوں نے پاکستانی ٹرک ڈرائیور کو روکا، ٹرک سے نکالا اور ...
دبئی کی سڑک پر 3 عرب شہریوں نے پاکستانی ٹرک ڈرائیور کو روکا، ٹرک سے نکالا اور مار مار کر لہو لہان کردیا، معاملہ عدالت پہنچا تو جج نے کیا فیصلہ سنایا؟ جان کر تمام پاکستانیوں کے پیروں تلے واقعی زمین نکل جائے گی، آئندہ کبھی عرب ملک کی عدالت کا رُخ کرنے کا بھی نہ سوچیں گے

  

دبئی سٹی (مانیٹر نگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں ایک عمر رسیدہ پاکستانی ڈرائیور کو ظالمانہ تشدد سے معذور کر دینے والے تین بحرینی شہریوں کو عدالت نے یہ کہہ کر بری کر دیا ہے کہ ان کے خلاف ثبوت ناکافی ہیں۔

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق ملزمان نے 2 اپریل کے دن شیخ زید روڈ پر پاکستانی شہری کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ انہوں نے 60سالہ پاکستانی شہری کے سر اور ٹانگوں پر اتنا تشدد کیا کہ وہ بیہوش ہو گیا ۔ متاثرہ پاکستانی نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان اس کے سڑک پر گر جانے کے باوجود اسے تشدد کا نشانہ بناتے رہے اور پھر اسے وہیں بیہوش چھوڑ کر فرار ہو گئے۔ جب اسے کچھ دیر بعد ہوش آیا تو اس نے خود ہی پولیس سے رابطہ کیا۔ ایک پولیس اہلکار ،جو کہ وقوعہ کے وقت موقع پر پہنچا تھا، نے بھی عدالت کو بتایا کہ بحرینی شہریوں نے پاکستانی ڈرائیور پر بدترین تشدد کیا تھا ۔

دبئی کے سمندر میں اربوں روپے سے ایسی چیز بنانے کا فیصلہ کرلیا کہ دیکھنا تو دور سُن کر ہی آپ کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ جائیں

ملزمان نے ابتدائی طور پر الزامات کو ماننے سے انکار کردیا تھا لیکن پولیس کی تفتیش کے دوران تسلیم کر لیا کہ انہوں نے عمر رسیدہ پاکستانی شہری کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ جب انہیں عدالت میں پیش کیا گیا تو انہوں نے پھر اپنا بیان بدل لیا۔ عدالت نے بھی ملزمان کے مﺅقف کو تسلیم کرتے ہوئے تینوں کو الزامات سے بری الزمہ قرار دے دیا۔

مزید :

عرب دنیا -