سی پیک کے تحت 2ارب ڈالر کا سکی کیناری پن بجلی منصوبہ 2022ء میں مکمل ہو گا

سی پیک کے تحت 2ارب ڈالر کا سکی کیناری پن بجلی منصوبہ 2022ء میں مکمل ہو گا

  

اسلام آباد (اے پی پی) خیبرپختونخوا کے ضلع مانسہرہ میں میں سکی کیناری ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر پرتعمیراتی کام زور و شور سے جاری ہے۔سرکاری ذرائع کے مطابق دریائے کنہار پر سْکی کیناری میں بجلی کے منصوبے پرتعمیراتی کام جاری ہے۔یہ منصوبہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے ارلی ہارویسٹ پراجیکٹ کے تحت تقریباً دو ارب ڈالر کی لاگت سے2022 میں مکمل ہوجائے گا۔ منصوبے کی تکمیل سے آٹھ سو ستر میگاواٹ بجلی پیدا ہوگی۔حکام کے مطابق اس منصوبہ کے تحت 54.5 میٹر بلند اور336 میٹر چوڑاڈیم تعمیر کیا جارہاہے جس کا ریزروائیر 3.1کلومیٹر طویل ہوگا اوراس میں 9 ملین کیوبک فٹ پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہوگی۔ڈیم کے دوسپل ویز ہوں گے جہاں 218 میگاواٹ کے 4 ٹربائن نصب کئے جائیں گے۔اس اہم منصوبہ کیلئے کاغان ناران روڈ کے تقریباً چارکلومیٹرحصے کو متبادل مقام کی طرف ڈائی ورژن دی جائے گی جبکہ منصوبہ کیلئے ٹرانسمیشن لائن پاکستان نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی بچھائے گی۔یہ منصوبہ بلٹ،اون،آپریٹ اینڈ ٹرانسفر کی بنیاد پر مکمل ہوگا اوراس کیلئے چین کے ایگزم بنک اورانڈسٹرئیل اینڈ کمرشل بنک آف چائنا کی جانب سے مالی تعاون فراہم کیا جا رہا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے سی پیک کے تحت خیبرپختونخوا میں پن بجلی کے کئی منصوبے زیر تکمیل ہیں ۔موجودہ حکومت نے توانائی کے بحران کو اولین ترجیحات میں رکھا ہے اورحکومتی اقدامات کے نتیجے میں اضافی بجلی قومی گرڈ میں شامل ہوچکی ہے جس سے لوڈشیڈنگ کے دورانیے میں نمایاں کمی آئی ہے۔حکومت نے آئندہ سال تک مزید 10ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں داخل کرنے کا ہدف مقررکیاہے جس سے لوڈشیڈنگ مکمل طور پر ختم ہوجائیگی۔

مزید :

کامرس -