حاجی کیمپ سے راوی تک زیر زمین ڈرین ، کھدائی شروع

حاجی کیمپ سے راوی تک زیر زمین ڈرین ، کھدائی شروع

  

لاہور(اپنے خبر نگار سے ) سٹیرنگ کمیٹی کے چیئرمین خواجہ احمد حسان نے ہدایت کی ہے کہ رمضان المبارک کے دوران اورنج لائن میٹرو ٹرین کے تعمیراتی کام کے سلسلے میں شہریوں کی سہولت کو پیش نظر رکھا جائے اور سروسز کی منتقلی کے لئے بجلی کاشٹ ڈاؤن کم سے کم وقت کے لئے کیا جائے ۔ اس مقصد کے لئے تمام متعلقہ پراجیکٹ ڈائریکٹرز لیسکو کی مشاورت سے شیڈول تیار کریں۔ پیکیج ون کے تیار شدہ سٹیشنوں پر چینی کنٹریکٹرز کی طرف سے جاری الیکٹریکل و مکینکل ورکس کے لئے بجلی کے عارضی کنکشن بلا تاخیر مہیا کئے جائیں۔ حاجی کیمپ سے براستہ چوبرجی دریائے راوی تک نئی ڈرین زیر زمین تعمیر کی جائے گی ۔ اس مقصد کے لئے یونیورسٹی گراؤنڈ کے علاقے میں کھدائی کا کام شروع کر دیا گیا ہے ۔ ڈیرہ گجراں میں تعمیر کئے جانے والے ڈپو میں ڈرینج مشینری کی تنصیب جلد از جلد مکمل کی جائے اور اسے مون سون کے آغاز سے قبل آپریشنل کر دیا جائے ۔ پی ٹی اے (پاکستان ٹیلی کمیونیکشن اتھارٹی)نے میٹرو ٹرین کے لئے وائرلیس سسٹم کے دو لائسنس جاری کر دیئے ہیں۔ وہ گزشتہ روز اورنج لائن منصوبے پر پیش رفت کا جائزہ لینے کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ مال روڈ پر زیر زمین تعمیر کئے جانے والے میٹرو ٹرین کے سنٹرل سٹیشن کا نام تبدیل کر کے جی پی او سٹیشن کر دیا گیا ہے جبکہ نیاز بیگ سٹیشن کا نام ٹھوکر نیاز بیگ سٹیشن کر دیا گیا ہے ۔ پیکیج ٹو کے تمام 13بالائے زمین سٹیشنوں کا تعمیراتی کام تیزی سے جاری ہے ۔ چھ سٹیشنوں کا گرے سٹرکچر رواں ماہ جبکہ باقی اگلے ماہ مکمل کر لئے جائیں ۔ پیکیج ٹو میں پائلنگ ‘پائل کیپس اور پیئرز تعمیر کرنے کا کام مکمل کیا جا چکا ہے۔اس حصے میں بالائے زمین ٹریک کی تعمیر کے لئے درکار 819یو ٹب گرڈرز اور 395ٹرانزمز کی پری کاسٹنگ شروع کر دی گئی ہے ۔ اس مقصد کے لئے خصوصی طور پر جدید ٹیکنالوجی کے حامل آلات درآمد کئے گئے ہیں۔ یہ تمام کام جولائی میں مکمل کرنے کا ہدف مقرر کیاگیا ہے ۔ تیار شدہ ٹرانزم کی تنصیب بھی شروع کر دی گئی ہے اور روزانہ سات ٹرانزم نصب کرنے کے لئے ضروری انتظامات کر لئے گئے ہیں۔ چوبرجی سے ٹھوکر نیاز بیگ تک سڑکوں کی بحالی کا تقریباً 70فی صد کام بھی مکمل کر لیا گیا ہے ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کا مجموعی طور پر 68.25فیصد تعمیراتی کام مکمل ہو چکا ہے ۔ڈیرہ گجراں سے چوبرجی تک پیکیج ون کا سب سے زیادہ 82.79 فیصد‘ چوبرجی سے علی ٹاؤن تک پیکیج ٹو کا51فیصد ‘پیکیج تھری ڈپو کا 73.68فیصد جبکہ پیکیج فور سٹیبلینگ یارڈ کی تعمیر کا68.01فیصد کام مکمل کیا جا چکا ہے خواجہ احمد حسان نے پیکیج ٹو پر تعمیراتی کام کی رفتار میں بہتری پر اطمینان کا اظہار کیا۔اجلاس میں چیف انجینئر ایل ڈی اے اسرار سعید‘ جنرل منیجرآپریشنز پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی سید عزیر شاہ‘ جنرل منیجر نیسپاک سلمان حفیظ‘ چیف انجینئر ٹیپا سیف الرحمن ‘چیف ایگزیکٹو لیسکو واجد علی کاظمی ‘واسا‘پی ٹی سی ایل ‘سوئی گیس ‘ ریلوے‘ ٹریفک پولیس ‘سول ڈیفنس‘ریسکیو112 اور دیگر متعلقہ محکموں کے اعلی افسران کے علاوہ منصوبے کے چینی کنٹریکٹر سی آر نورنکو اور چائنہ انجینئر نک کنسلٹنس کے نمائندوں اور مقامی کنٹریکٹرز نے شرکت کی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -