کرپٹ اشرافیہ کا احتساب قوم کا مطالبہ ہے،احجاز احمد ہاشمی

کرپٹ اشرافیہ کا احتساب قوم کا مطالبہ ہے،احجاز احمد ہاشمی

  

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر) جمعیت علما پاکستان کے مرکزی صدر پیر اعجاز احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ کرپٹ اشرافیہ کا احتساب قوم کا مطالبہ ہے، جس نے قومی دولت لوٹی ہے، سپریم کورٹ کی طرف سے مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کی تشکیل احسن اقدام ہے، لیکن ملزم کوئی بھی ہو اس کا استحقاق مجروح نہیں ہونا چاہیئے ۔ وزیر اعظم کے صاحبزادے حسین نواز کو انتظار کروانا اور کھڑے رکھنا جے آئی ٹی کے بارے میں کوئی اچھا تاثر نہیں پیدا کررہا ہے۔ کارکنوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی کی تشکیل اداروں اورقانون کی بالادستی کی بہترین مثا ل ہے۔ اس حوالے سے حسین نواز کے جے آئی ٹی کے دو ممبران پر اعتراضات کو سپریم کورٹ کی طرف سے مسترد کرکے گویا واضح کردیا گیا ہے کہ تحقیقاتی عمل جاری رہے گا۔

تاخیری حربے استعمال نہیں ہونے دیے جائیں گے۔ اب سیاستدانوں اور اس اہم اور تاریخی کیس میں پارٹی بننے والی جماعتوں کو اعلیٰ اخلاقیات کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس پر سیاست سے گریز کرنا چاہیے، جے آئی ٹی سپریم کورٹ کی طرف سے تشکیل دی گئی ہے۔ اس پر انگشت نمائی افسوسنا ک ہے۔ اسی طرح حکمران جماعت کی طرف سے جے آئی ٹی کو دباو میں لانے کے حربے بھی قابل مذمت ہیں۔ تحقیقاتی عمل کو صاف شفاف اور بغیر کسی سیاسی دباو کے مکمل ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی ملزمان سے تحقیقات کرے، ٹارچر نہ کرے۔ حسین نواز کو گھنٹو ں کھڑے رکھنے اور انتظار کروانے کو اچھے اقدام کے طور پر نہیں دیکھا گیا۔ ہر ملزم کے بھی حقوق ہوتے ہیں ۔ اداروں کو انداز تحقیق بدلنا چاہیے۔ ملزم کی عزت نفس مجروح نہیں ہونی چاہیے۔ انسانی حقوق اور تفتیش کے اصولوں کا خیال رہنا چاہیے۔دوسری طرف مسلم لیگ ن کی طرف سے کارکنوں کا اکٹھے کرنا اور نعرے بازی او ر اسے ریلی کی شکل دینا تحقیقات پر منفی اثرات مرتب کرے گا۔ قیادت کا اس کا نوٹس لینا چاہیے۔ حکمرانوں کے لئے مشکل وقت ہے اور عدلیہ کے بارے میں مسلم لیگ ن ابھی تک سپریم کورٹ پر حملے کے الزامات کو دھو نہیں سکی

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -