وفاقی حکومت نے بیرونی قرضوں اور گرانٹ کی مد میں176ارب 67کروڑ 70لاکھ روپے زائد لئے

وفاقی حکومت نے بیرونی قرضوں اور گرانٹ کی مد میں176ارب 67کروڑ 70لاکھ روپے زائد ...

  

لاہور (اسد اقبال سے) وفاقی حکومت نے بجٹ خسارہ پورا کرنے کیلئے رواں مالی سال میں بیرونی قرضوں ا ور گرانٹ کی مد میں ہدف کے مقابلہ میں 176 ارب 67 کروڑ 70 لاکھ روپے زائد لئے ہیں ۔ رواں مالی سال کے بجٹ میں بجٹ خسارہ پورا کرنے کے لئے بیرونی قرضوں اور گرانٹ کی مد میں 819 ارب 61 کروڑ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا تھا جبکہ حکومت نے 996 ارب 28 کروڑ 70 لاکھ روپے لئے ۔ بیرونی قرضوں کی مد میں 174 ارب 81 کروڑ 80 لاکھ اور بیرونی گرانٹ کی مد میں ایک ارب 85 کروڑ 90 لاکھ روپے ہدف کے مقابلہ میں زائد لئے گئے ہیں ۔ رواں مالی سال کے بجٹ میں بیرونی قرضوں کی مد میں 796 ارب 78 کروڑ 50 لاکھ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 971 ارب 60 کروڑ 30 لاکھ روپے لئے گئے ہیں ۔ قرضوں میں پراجیکٹ قرضوں کیلئے 219 ارب 14 کروڑ 90 لاکھ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 299 ارب 77 کروڑ 60 لاکھ روپے لئے گئے جو ہدف کے مقابلہ میں 80 ارب 62 کروڑ 70 لاکھ روپے زائد ہیں ۔ پراجیکٹ قرضوں کے تحت وفاقی حکومت نے 150 ارب 43 کروڑ 80 لاکھ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 221 ارب 89 کروڑ روپے لئے گئے جو مقرر ہدف کے مقابلہ میں 71 ارب 45 کروڑ 20 لاکھ روپے زائد ہیں ۔ وزارتوں کیلئے 24 ارب 16 کروڑ 90 لاکھ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 28 ارب 55 کروڑ روپے لئے گئے جو ہدف کے مقابلہ میں 4 ارب 38 کروڑ 10 لاکھ روپے ہے ۔ کارپوریشنوں کے لئے 115 ارب 6 کروڑ 30 لاکھ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا جبکہ 142 ارب 60 کروڑ 30 لاکھ روپے لئے گئے جوہدف کے مقابلہ میں 27 ارب 54 کروڑ روپے زائد ہیں ۔ پروگرام قرضوں کا ہدف 133 ارب 79 کروڑ 70 لاکھ روپے مقرر کیا گیا تھا اس مد میں ہدف کے مقابلہ میں 21 ارب 55 کروڑ 30 لاکھ روپے کم قرضہ لیا گیا ۔ دیگر امداد کی مد میں 443 ارب 83 کروڑ 90 لاکھ روپے قرضہ لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 559 ارب 58 کروڑ 90 لاکھ روپے لئے گئے جو ہدف کے مقابلہ میں 115 ارب 75 کروڑ روپے زائد ہیں ۔ بیرونی گرانٹ کی مد میں 228 ارب 26 کروڑ روپے لینے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 246 ارب 85 کروڑ روپے لئے گئے جو ہدف کے مقابلہ میں ایک ارب 85 کروڑ 90 لاکھ روپے زائد ہیں ۔

مزید :

صفحہ آخر -