خیبرپختونخوا کے مختلف علاقوں میں بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ ،شہری بلبلا اٹھے

خیبرپختونخوا کے مختلف علاقوں میں بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ ،شہری بلبلا اٹھے

  

نوشہرہ ‘ شبقدر‘ تیمرگرہ‘ ہری پور‘ چارسدہ‘ صوابی ’ تخت بھائی (نمائندگان)بجلی کی لوڈشیڈنگ و آنکھ مچولی عوام پریشان حکومت پن بجلی کی پیداوار میں گراں قدر خدمات سرانجام دینے والے ضلع ہریپور کو بجلی کی لوڈشیڈنگ سے مستثنی قرار دے مختلف عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ضلع ہر ی پورمیں روزانہ کی بجلی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی روزمرہ زندگی کو متاثر کررکھا ہے وہ لوگ جن کا آمدنی زریعہ میکنیکل اور ٹیکنیکل کام کے زیادہ متاثر ہیں بجلی ہو تو مشین چلتی ہے اور انھیں اپنے گھر چلانے کے لیے رقم ملتی ہے بجلی نہ ہو تو یہ لوگ ہاتھ پر ہاتھ رکھے بیٹھے رہتے ہیں ادھر عام عوام بھی بجلی کی لوڈشیڈنگ سے شدید متاثر ہیں اوپر سے سخت گرمی ہے بجلی عدم فراہمی کے سبب باالخصوص شیر خوار بچے متاثر ہو کر رہ جاتے ہیں عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ملک کے وسیع ترمفاد کی خاطر اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کی خاطر ضلع ہری پورکے عوام نے گراں قدر قربانی دی نتیجتاً تربیلہ ڈیم بنا جس کا بدولت ملک میں انڈسٹری متحرک ہوئی اور ملک سرسبز و شاداب ہوا عوام کو گھریلو استعمال کے لیے بجلی فراہم ہوئی اس قربانی کے صلہ میں ضلع ہری پور میں بسنے والے عوام کا یہ حق بنتا ہے کہ انھیں بجلی کی لوڈشیڈنگ سے مستثنی قرار دیا جائے تاکہ جو لوگ ملک کی خاطر قربانی دیتے رہے یادیں گے ان کی حوصلہ افزائی ہو اور انھیں ریلیف ملے ‘ شبقدر حکمرانوں اور محکمہ واپڈا کا مقدس مہینے میں بھی ر وزہ داروں پر رحم نہ آیا ،طویل لوڈشیڈنگ سے روزہ دار بلبلا اُٹھے ،مساجد میں پانی ختم نمازیوں کو شدید مشکلات کا سامنا ،روزانہ افطاری اور سحری کے اوقات میں بجلی بند کر دی جاتی ہے روزہ دار سخت اذیت سے دوچار ہو رہے ہیں وزیر اعظم نے بجلی لوڈشیڈنگ میں فوری طور پر کمی کا اعلان کیا ہے لیکن مقامی واپڈا اہلکار عمل درآمد نہیں کرتے سولہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ بدستور جاری ہیں علاقہ عوام نے غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے تفصیلات کے مطابق شبقدر میں غیر اعلانیہ طویل بجلی لوڈشیڈنگ نے روزہ داروں کو عذاب میں مبتلا کر دیا ہے سولہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے باعث روزہ دار پریشانی سے دوچار مسجدوں میں پانی نہیں سحری اور افطاری میں بجلی بند کر دی جاتی ہے خود ساختہ لوڈشیڈنگ نے عوام کو ذہنی امراض میں مبتلا کر دیا ہے عوام کا کہنا ہے شدید گرمی اور روزہ کی حالت میں سولہ گھنٹے بجلی بند ہونے سے حالت غیر ہوجاتی ہے مسلسل بجلی بند اور شدید گرمی سے بیماریاں پیدا ہو گئی ہے انہوں نے کہا کہ پیسکو ہمارا مذید امتحان نہ لیں اگر وزیر اعظم کے حکم کے مطابق بھی لوڈشیڈنگ میں کمی نہ لائی گئی تو ایسا احتجاج ریکارڈ کرائینگے کہ واپڈا والے عمر بھر یا د رکھیں گے جس کی ساری ذمہ داری بھی واپڈا والوں پر ہوگی ‘ تحصیل بلا مبٹ میں کم وولٹیج اور طو یل تر ین لو ڈ شیڈ نگ کے با عث روزہ دار وں کی مشکلات میں اضافہ ،درجنوں وا ٹر سپلا ئی سکمیں بند ہو نے سے معمولات ذند گی بری طر ح متا ثر ۔تحصیل نا ظم بلا مبٹ عمران الدین ایڈو کیٹ کے مطابق واپڈ ا کی جانب سے رمضان شر و ع ہو تے ہی نارواا ور غیر اعلا نیہ لو ڈ شیڈ نگ کا سلسلہ 18گھنٹوں تک پہنچ گیا جس سے شد ید گر می میں روزہ داروں کو مشکلات میں مبتلا کر دیا ہے ،جبکہ دوسری جا نب بجلی وولٹیج انتہائی کم ہو نے کی و جہ سے درجنوں واٹرسپلا ئی سکمیں بند پڑ ی ہے جس کے با عث لو گ کئی کلو میٹر دور سے پانی لانے پر مجبورہے انہوں نے خبر دار کیا کہ واپڈ ا با بر کت مہینے میں لوگوں کے صبر کا مز ید امتحان نہ لے و ر نہ راست اقدام پر مجبور ہو نگے ‘ تحصیل تخت بھائی میں رمضان المبارک اور شدید گرمی کے باوجود محکمہ واپڈا نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے روزہ داروں کی زندگی اجیرن بنا دی روزانہ اٹھارہ اٹھارہ گھنٹے بجلی نہ ہونے کی وجہ سے نمازی اور روزہ دارآپے سے باہر ہو گئے دہمکی دی کہ اگر فوری طور پر لوڈ شیڈنگ کاسلسلہ بند نہ کیا گیا تو شاہراہ ملاکنڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لیے بند کرکے گریڈ سٹیشن کا گھیراو کرنے سے دریغ نہیں کریں گے ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماوں سابق ناظم حاجی فضل حالق ،میر عالم صافی ،شیر ماما ،حاجی غلام رسول ، ڈاکٹر گل محمد اور لعل گل یوسفزئی نے کہا ہے کہ تحصیل تخت بھائی کے گرد نواح علاقوں ہاتھیان ،لوند خوڑ،شیرگڑہ ،جلالہ،تورڈھیر،پیر سدو،گوجرگڑئی جھنڈئی ،ٹکر ،فضل اباد اور مزدور اباد میں بجلی کی ناروا لوڈشیڈنگ سے عوام تنگ اچکے ہیں مساجدوں میں پانی ناپید ہو چکی ہے نمازیوں کو شدیدمشکلات کا سامنا ہوتا ہے حکومت کے بلند بانگ دعوں کے باوجود سحری اور افطاری کے اوقات میں بھی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے انہوں نے کہا مرکزی حکومت خیبر پختو نخوا کے عوام کے ساتھ سراسر ظلم و زیادتی پر ااتر ائی ہے اور پختونوں کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا رویہ اختیار کر رکھا ہے انہوں نے کہا کہ تحصیل تخت بھائی میں بجلی چوری بھی نہیں ہوتی لیکن اس کے باوجود یہاں کے عوام پر قیامت برپا کیا ہے اور روزانہ اٹھارہ اٹھارہ گھنٹے بجلی نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے انہوں نے کہا کہ دن کے وقت دوپہر بارہ بجے کے بعد بجلی کو بند کرنا ظلم کی ایک انتہا ہوتی ہے انہوں نے دہمکی دی کہ اگر محکمہ واپڈا نے تحصیل تخت بھائی میں لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو تحصیل بھر کے عوام سڑکوں آنے پر مجبور ہو نگے اور شاہراہ ملاکنڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لیے بند کرکے گریڈ سٹیشن کے گھیراو سے بھی دریغ نہیں کریں گے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -