سوات اور دیگر دریاؤں پر 67ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی جا سکتی ہے :گوہر تاج

سوات اور دیگر دریاؤں پر 67ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی جا سکتی ہے :گوہر تاج

  

سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان) واپڈا ہائیڈور یونین کے مرکزی چےئرمین گوہر تاج اور صوبائی چےئرمین محمد اقبال نے کہا ہے کہ سوات سمیت دیگردریاوں پر 67ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی پیدا کی جاسکتی ہے جس کے لئے ترجیحی بنیادوں پر کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ بجلی یونٹ کے ریٹ آسمان سے باتیں کر رہے ہیں اس لئے اگر ان دریاوں سے 67ہزارمیگاواٹ بجلی پیدا کی جائے تو عوام کو سستی بجلی مل سکتی ہے ۔ واقعہ درگئی اور بٹ خیلہ میں ہونے والے جانی و مالی نقصانات پر غم زدہ ہیں ۔ہم میں بھی کمی ہیں تاہم سارے صورتحال پر عوام کو با شعور بنانے کی ضرو رت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے واپڈا ہاؤس درگئی میں اجلاس اور مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ڈویژنل چےئرمین گل زمین خان ، صوبائی جنرل سیکرٹری مستجاب مزدور یار ، صوبائی جائنٹ سیکرٹری علی سید خان ، سرکل جنرل سیکرٹری یوسف خان اور یونین کے دیگر عہدیدار اور آرکان بھی موجود تھیں ۔ڈویژنل جنرل سیکرٹری گل زمین خان نے کہا کہ ڈی سی ملاکنڈ اور اسسٹنٹ کمشنر درگئی بٹ خیلہ اور درگئی واقعات اور نقصانات میں ملوث آفراد کے خلاف فی الفور ایف آئی آر درج کرائیں بصورت دیگر عدالتی راستہ آپناینگے ۔ انہوں نے کہا کہ درگئی اور بٹ خیلہ واقعات میں تقریبأ ایک کروڑ روپے کے نقصانات ہوئے ہیں۔انہوں نے واپڈا ہاؤس اور دفاتر کی سیکیورٹی بڑھانے کا بھی مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ احتجاج کی قیادت کرنے والے منتخب نمائندے اور علاقائی مشران صبر سے کام لیں اور پُر آمن احتجاج کی آڑ میں شرپسندی کی روک تھام کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم بٹ خیلہ اور درگئی میں رونما ہونے والے واقعات کی پُر زور مذمت کرتے ہیں ۔ مرکزی چےئرمین نے کہا کہ نظام درست کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اداروں میں میرٹ کی بجائے سیاسی بنیادوں پر بھرتیوں سے مسائل جنم لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بجلی چوری کرنے والے لوگ بجلی صارفین سے زیادہ بجلی چوری کرکے استعمال کرتے ہیں ۔ انہوں نے حکومت سے ماہ رمضان میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ کم سے کم کرنے کا بھی مطالبہ کیا ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -