شیرگڑھ میں بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ سے عوام کی اجیرن

شیرگڑھ میں بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ سے عوام کی اجیرن

  

شیرگڑھ ( نامہ نگار) تحصیل تخت بھائی میں رمضان المبارک اور شدید گرمی کے باوجود محکمہ واپڈا کے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے روزہ داروں کی زندگی اجیرن بنا دی روزانہ اٹھارہ اٹھارہ گھنٹے بجلی نہ ہونے کی وجہ سے نمازی اور روزہ دارآپے سے باہر انہوں نے دہمکی دی کہ اگر فوری طور پر لوڈ شیڈنگ کاسلسلہ بند نہ کیا گیا تو شاہراہ ملاکنڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لیے بند کرکے گریڈ سٹیشن کا گھیراو کرنے سے بھی دریغ نہیں کریں گے ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماوں سابق ناظم حاجی فضل حالق ،میر عالم صافی ،شیر ماما ،حاجی غلام رسول ، ڈاکٹر گل محمد اور لعل گل یوسفزئی نے کہا ہے کہ تحصیل تخت بھائی کے گرد نواح علاقوں ہاتھیان ،لوند خوڑ،شیرگڑہ ،جلالہ،تورڈھیر،پیر سدو،گوجرگڑئی جھنڈئی ،ٹکر ،فضل اباد اور مزدور اباد میں بجلی کی ناروا لوڈشیڈنگ سے عوام تنگ اچکے ہیں مساجدوں میں پانی ناپید ہو چکی ہے نمازیوں کو شدیدمشکلات کا سامنا ہوتا ہے حکومت کے بلند بانگ دعوں کے باوجود سحری اور افطاری کے اوقات میں بھی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے انہوں نے کہا مرکزی حکومت خیبر پختو نخوا کے عوام کے ساتھ سراسر ظلم و زیادتی پر ااتر ائی ہے اور پختونوں کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا رویہ اختیار کر رکھا ہے انہوں نے کہا کہ تحصیل تخت بھائی میں بجلی چوری بھی نہیں ہوتی لیکن اس کے باوجود یہاں کے عوام پر قیامت برپا کیا ہے اور روزانہ اٹھارہ اٹھارہ گھنٹے بجلی نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے انہوں نے کہا کہ دن کے وقت دوپہر بارہ بجے کے بعد بجلی کو بند کرنا ظلم کی ایک انتہا ہوتی ہے انہوں نے دہمکی دی کہ اگر محکمہ واپڈا نے تحصیل تخت بھائی میں لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو تحصیل بھر کے عوام سڑکوں آنے پر مجبور ہو نگے اور شاہراہ ملاکنڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لیے بند کرکے گریڈ سٹیشن کے گھیراو سے بھی دریغ نہیں کریں گے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -