فلپائن میں داعش کے خلاف آپریشن کے دوران فوج کی بمباری سے اپنے ہی 10 اہلکار ہلاک

فلپائن میں داعش کے خلاف آپریشن کے دوران فوج کی بمباری سے اپنے ہی 10 اہلکار ہلاک
فلپائن میں داعش کے خلاف آپریشن کے دوران فوج کی بمباری سے اپنے ہی 10 اہلکار ہلاک

  

منیلا(ویب ڈیسک) فلپائن میں داعش کے جنگجوؤں کے ٹھکانوں پر بمباری کے دوران نشانہ خطا ہونے سے سرکاری فوج ہی کے 10 اہلکار ہلاک ہوگئے۔دارالحکومت منیلا میں وزیر دفاع ڈیلفن لورنزانا نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ جنوبی شہر مراوی میں دو جنگی طیارے کارروائی کررہے تھے۔ ایک طیارہ کا نشانہ خطا ہوگیا جس نے غلطی سے فوج کی پوزیشنز پر بم گرادیے، جس کے نتیجے میں 10 فوجی ہلاک اور 7 زخمی ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بہت افسوس ناک واقعہ ہے تاہم بسا اوقات جنگ میں ایسا ہوجاتا ہے۔ اس آپریشن میں شاید آپس میں ٹھیک طرح سے رابطہ نہیں ہوپایا۔

واضح رہے کہ مراوی پر تقریبا 10 روز سے داعش کے جنگجوؤں کا قبضہ ہے جن کے خلاف فلپائنی فوج آپریشن کررہی ہے۔ فضائیہ نے ہیلی کاپٹروں کی مدد سے بھی جنگجوؤں کی پوزیشنز پر میزائل حملے کیے ہیں۔ رپورٹس کے مطابق عسکریت پسند رہائشی عمارتوں میں چھپے ہیں اور انہوں نے متعدد افراد کو یرغمال بھی بنایا ہوا ہے۔مقامی حکام کے مطابق مراوی کی 90 فیصد آبادی نقل مکانی کرچکی ہے تاہم اب بھی تقریبا 2 ہزار سویلینز شہر میں پھنسے ہیں۔فوجی افسران نے بارہا کہا کہ وہ عسکریت پسندوں کے ٹھکانوں پر سرجیکل اسٹرائکس اور بہت احتیاط کے ساتھ فضائی کارروائی کررہے ہیں تاہم فوجی ہلاکتوں سے ان کا یہ دعویٰ مشکوک نظر آتا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -