بلوچستان اسمبلی کی قرار داد الیکشن کے لئے بد شگونی ، آج سے لوڈشیڈنگ کے ذمہ دار ہم نہیں : شہباز شریف

بلوچستان اسمبلی کی قرار داد الیکشن کے لئے بد شگونی ، آج سے لوڈشیڈنگ کے ذمہ ...

  

لاہور،گوجرانوالہ،کامونکے(جنرل رپورٹر، بیورورپورٹ ،نمائندہ خصوصی) وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے کہا ہے ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ نہ ہونے کے برابر ہے، یکم جون سے لوڈشیڈنگ ہوئی تو اس کے ذمہ دار نوازشریف یا میں نہیں ہوں گے۔الیکشن کے التوا کے بارے میں بلوچستان اسمبلی کی قرار داد بد شگونی ہے۔لاہورمیں پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نے ملک بھر سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا ہے اس لئے یکم جون سے اگر ملک میں لوڈشیڈنگ ہوئی تو اس کی ذمہ داری ہم پہ نہ ڈالی جائے۔شہبازشریف نے کہا کہ ہم نے پنجاب کے اسپتالوں کی حالت بہتر کی ہے، صوبے میں اس وقت 70 ڈاکٹرز یورپ اور مشرق وسطیٰ سے آئے ہیں، کڈنی اینڈ لیور انسٹیٹیوٹ 20 ارب روپے کا منصوبہ ہے اور یہاں اب تک دو مریضوں کا مفت ٹرانسپلانٹ کیا گیا ہے، کڈنی اینڈ لیور انسٹیٹیوٹ میں غریب مریضوں کا مکمل علاج مفت ہورہا ہے جبکہ صحت کے شعبے میں مزید کام ہو رہے ہیں۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ کینسر کے علاج پر میرے 60 ہزار ڈالرز خرچ ہوئے تھے اور اب خدشہ ہے کہ قومی احتساب بیورو ( نیب ) پوچھے گا کہ 60 ہزار ڈالرز کہاں سے آئے تھے، نیب کی وجہ سے خراب لوگوں کی شامت تو آنی تھی لیکن اچھے لوگ بھی خوف زدہ ہوگئے ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب میں اساتذہ اور پولیس اہلکاروں کو میرٹ پربھرتی کیا گیا ہے، تین ماہ سے محسوس کر رہا ہوں شاید وہ کام نہیں ہوسکا جو کرنا چاہتا تھا۔جیو نیوز کے مطابق انہوں نے کہا عمران خان رمضان میں بھی یوٹرن اور جھوٹ سے باز نہیں آرہے۔گوجرانوالہ سے بیورورپورٹ کے مطابق شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب بھر کے ضلعی و تحصیل ہسپتالوں کی تعمیر نو اور نئے شعبہ جات کے قیام کے لئے حکومت پنجاب نے گذشتہ تین سالوں میں شعبہ صحت میں انقلاب برپا کر دیا گیا ہے پنجاب کے 100 تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتالوں میں ایک مربوط پروگرام کے تحت انہیں سٹیٹ آف دی آرٹ صحت عامہ کی سہولیات کے ساتھ ساتھ امسال 6۔ ارب ر وپے کی اعلی معیار کی ادویات فراہم کی گئیں اور 100 میں سے پہلے فیز میں 15 ہسپتالوں کا چناؤکیاگیا۔ جن میں سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کامونکی بھی شامل ہے۔ باقی 85 ہسپتالوں میں اللہ تعالی نے 2018 کے الیکشن میں موقع دیا تو اگلے مینڈیٹ میں پہلے سال میں ہی 100 تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتالوں میں نئے شعبے قائم کر دیئے جائیں گے۔ ان خیالات کاا ظہار انہوں نے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کامونکی 8 کروڑ 70 لاکھ روپے کی لاگت سے تجدید نو اور تزئین و آرائش کے کام کاتفصیلی جائزہ لینے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر پرائمری و سیکنڈری صحت پنجاب خواجہ عمران نذیر‘ سیکرٹری صحت علی جان خاں‘ سپیکر پنجاب اسمبلی محمد اقبال خاں ترجمان حکومت پنجاب محمد احمد خاں‘ ممبران قومی و صو بائی اسمبلی‘ کمشنر‘ آر پی او ‘ ڈپٹی کمشنر ‘ سی پی او اور میڈیا کے نمائندوں نے کثیرتعداد میں شر کت کی۔ و زیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف نے کہاکہ آج ضلعی و تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں میں سٹیٹ آف دی آرٹ صحت عامہ کی مفت سہولیات کی فراہمی جن میں رینو و یشن‘ وارڈز اپ گریڈیشن ‘ ہسپتالوں میں جدید مشینری ‘ بہترین کمبلز ‘ بیڈز ‘ نر سوں اور ڈاکٹر ز کی تعداد میں اضافہ کی بدولت انقلابی تبدیلیاں لائی گئیں اور پنجاب کے ہسپتالوں میں امسال 6 ۔ ارب روپے کی اعلی کوالٹی کی ادویات مہیا کی گئیں جن کی بدولت خادم اعلی ‘ وزراء ‘ بیورو کریٹس اور جوڈیشری کے افسران بھی عام آدمی کی طرح یہی ادویات کھا کر صحت یاب ہو رہے ہیں۔ کامونکے سے نمائندہ خصوصی کے مطابق شہباز شریف نے کہا ہے عام انتخابات میں تاخیر کی کوئی وجہ نہیں ہے،اگر انتخابات میں تاخیر کی گئی تو خواہ مخواہ خرابیاں پیدا ہونگی ۔عمران خان رمضان المبارک میں جھوٹ اور یوٹرن کی سیاست کررہے ہیں ۔عمران خان نے کے پی میں منفی چھ میگاواٹ بجلی پیدا کی ہے انہوں نے کہا کہ پنجاب کے سو تحصیل ہیڈ کوارٹر وں کی عمارتوں میں توسیع اور اُنہیں سٹیٹ آف آرٹ ہسپتال بنانے کا منصوبہ بنایا تھا۔پہلے مرحلے میں پندرہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں جن میں کامونکے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال شامل ہے کو تعمیر کیا گیا ہے جبکہ چھبیس ضلعی ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں کو بنایا گیا ہے ۔خلائی مخلوق بارے سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہم اپنی کار کردگی کو عوام کے سامنے رکھیں گے ۔اور کارکردگی کی بناپر ساری سازشیں ناکام بنائیں گے ۔اس موقع پر صوبائی وزیر خواجہ عمران نذیر،سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال،ارکان اسمبلی قیصر اقبال سندھو،محمد اقبال گجر ،اشرف وڑائچ،شازیہ سہیل میر،پومی بٹ ،توفیق بٹ ،چودھری اختر علی خان ،محمد اشرف انصاری ،مدثر قیوم،پنجاب حکومت کے ترجمان ملک احمداور سابق ایم این اے حنیف عباسی،پیر غلام فرید،رفاقت گجر اور چودھری ذوالفقار علی بھنڈر بھی موجود تھے۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -