قبضہ میں ملوث خاتون ایس ایچ او سمیت 6اہلکاروں کی آج برخواستگی کا امکان

قبضہ میں ملوث خاتون ایس ایچ او سمیت 6اہلکاروں کی آج برخواستگی کا امکان

  

ملتان (وقائع نگار) گلگشت میں اراضی قبضہ کرانے میں ملوث خاتون ایس ایچ او سمیت 6پولیس اہلکاروں کو آج نوکری سے برخاست کئے جانے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے جبکہ مذکورہ معاملے پر مقرر ہونیوالے انکوائری افسر نے بھی اپنی رپورٹ مکمل کرکے افسران کو بھجوا دی ہے۔ (بقیہ نمبر32صفحہ12پر )

معلوم ہوا ہے کہ کچھ عرصہ قبل گلگشت کے علاقے میں گول باغ کے قریب واقع بلڈنگ پر قبضہ کے دوران ایک نوجوان مزاحمت پر فائرنگ کی زد میں آکر قتل ہوگیا تھا جس پر پولیس نے کارروائی کرکے ملزمان کو گرفتار کرکے ان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا۔ مقدمہ کے ملزمان کچھ جوڈیشل ہوچکے اور کچھ کی گرفتاری ابھی باقی ہے۔ مذکورہ معاملے پر نوٹس لیتے ہوئے سی پی او ملتان نے انکوائری افسر بھی مقرر کیا۔ واضح رہے اس واقعہ میں پس پردہ طمع نفسانی کی خاطر ملوث پولیس اہلکار سب انسپکٹر حق نواز اور شوکت ہیڈکانسٹیبل کو مقدمہ میں پہلے ہی جوڈیشل کروا چکی ہے جبکہ یہاں ذرائع کا کہنا ہے کہ انکوائری مکمل ہوچکی ہے۔ خاتون ایس ایچ او ناظمہ مشتاق‘ سب انسپکٹر حق نواز‘ اے ایس آئی پرویز شوکت‘ محرر ارشد غوری اور ہیڈکانسٹیبل کو انکوائری میں ملوث پایا گیا ہے اور امید ظاہر کی جارہی ہے کہ آج جمعہ کو سی پی او ملتان ان تمام پولیس اہلکاروں کو نوکری سے برخاست کردیں گے جبکہ دوسری جانب پولیس کی مذکورہ معاملے میں مزید پیشرفت ہوئی ہے۔ پولیس نے رجسٹری برانچ سے قبضہ ہونیوالی اراضی کی اصل رجسٹری کو بھی حاصل کرلیا ہے جس کی روشنی میں مقدمہ کو یکسو کیا جائے گا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -