خواجہ آصف نا اہلی نظر ثانی کیس ، فیصلہ 11 بجے تک کیلئے محفوظ

خواجہ آصف نا اہلی نظر ثانی کیس ، فیصلہ 11 بجے تک کیلئے محفوظ
خواجہ آصف نا اہلی نظر ثانی کیس ، فیصلہ 11 بجے تک کیلئے محفوظ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ آف پاکستان نے خواجہ آصف نا اہلی نظر ثانی کیس پر فیصلہ 11 بجے تک کیلئے محفوظ کرلیا ہے۔

سپریم کورٹ میں خواجہ آصف نا اہلی فیصلے کے خلاف اپیل کی سماعت جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔ بینچ میں جسٹس فیصل عرب اور جسٹس سجاد علی شاہ شامل ہیں۔ آج (جمعہ کو ) سماعت کے دوران عثمان ڈار کے وکیل سکندر بشیر مہمند نے دلائل دیے،  انہوں نے اپنے دلائل میں کہا کہ خواجہ آصف کی مدت بطور کابینہ ممبر کا ریکارڈ جمع کروایا ہے، ان کا بطور وزیر حلف دیکھ لیا جائے، خواجہ آصف نے حلف یہ اٹھایا کہ وہ ذاتی مفاد کو خاطر میں نہیں لائیں گے لیکن وہ وزیر ہوتے ہوئے بیرون ملک ملازم بھی رہے۔  بعد ازاں خواجہ آصف کے وکیل منیر اے ملک نے جواب الجواب دیا۔ فریقین کے دلائل سننے کے بعد سپریم کورٹ نے 11 بجے تک کیلئے فیصلہ محفوظ کرلیا۔

بینچ کے سربراہ جسٹس عمر عطا بندیال نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ کسی نتیجے پر پہنچے تو 11 بجے فیصلہ سنادیں گے بصورت دیگر فیصلہ محفوظ کرلیں گے۔

خیال رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے 26 اپریل کو تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے وزیر خارجہ خواجہ آصف کو متحدہ عرب امارات کا اقامہ رکھنے پر تاحیات نااہل قرار دیا تھا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -Breaking News -قومی -اہم خبریں -