’یہ امام مجھے مسجد میں جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا لیکن میں چپ رہا کیونکہ۔۔۔‘ لڑکے نے ایسا انکشاف کردیا کہ شیطان کوبھی اس حرکت پر شرم آجائے

’یہ امام مجھے مسجد میں جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا لیکن میں چپ رہا ...
’یہ امام مجھے مسجد میں جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا لیکن میں چپ رہا کیونکہ۔۔۔‘ لڑکے نے ایسا انکشاف کردیا کہ شیطان کوبھی اس حرکت پر شرم آجائے

  

نوٹنگھم(مانیٹرنگ ڈیسک) خانہ خدا میں عوام کی مذہبی رہنمائی کا فریضہ سر انجام دینے والوں کو لوگ عزت اور تکریم کی نگاہ سے دیکھتے ہیں لیکن اس مقدس مقام پر فائز ہوتے ہوئے بھی بعض لوگ شیطان کے پیروکار بن کر خود بھی رُسوا ہو جاتے ہیں اور اپنے مقدس منصب کے لئے بھی بدنامی کا سبب بنتے ہیں۔ برطانیہ کی ایک مسجد میں کم سن لڑکے کو جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والا ادھیڑ عمر امام بھی ایک ایسی ہی شرمناک مثال ہے جو اپنے بداعمال کی وجہ سے ذلیل و رسوا بھی ہوا ہے اور اب باقی زندگی بھی جیل میں گزارے گا۔ 

دی میٹرو کے مطابق 61سالہ امام مسجد محمد ربانی نے نوٹنگھم شہر کی ایک مسجد میں 12سالہ بچے کو متعدد بار زیادتی کا نشانہ بنایا۔ وہ سینٹن کے علاقے میں واقع مسجد میں امامت کے فرائض سرانجام دیتا تھا۔ اس نے کمسن لڑکے کو متعدد بار زیادتی کا نشانہ بنایا مگر اس کے خوف اور دھمکیوں کے باعث وہ خاموش رہنے پر مجبور تھا۔ بالآخر جب یہ معاملہ عدالت کے سامنے پہنچا تو امام مسجد نے خود پر لگائے گئے الزامات کو جھوٹ قرار دے دیا مگر تحقیقات اورشواہد کے روشنی میں اس کا جرم ثابت ہوگیا۔ عدالت نے اسے 25سال قید کی سزا سنائی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -