امریکی صدر ٹرمپ نے بشارالاسد کو جانور کہہ کر مخاطب کیا تو آگے سے انہوں نے کیا جواب دے دیا؟ جان کر آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی

امریکی صدر ٹرمپ نے بشارالاسد کو جانور کہہ کر مخاطب کیا تو آگے سے انہوں نے کیا ...
امریکی صدر ٹرمپ نے بشارالاسد کو جانور کہہ کر مخاطب کیا تو آگے سے انہوں نے کیا جواب دے دیا؟ جان کر آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی

  

دمشق(مانیٹرنگ ڈیسک)بچوں کی لڑائی میں آپ نے اکثر دیکھا ہو گا کہ ایک گالی دیتا ہے تو دوسرا جواب دیتا ہے ’’جو کہتا ہے وہی ہوتا ہے۔‘‘ کچھ ایسی ہی لڑائی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور شام کے صدر بشارالاسد کے درمیان ہو گئی ہے۔ امریکی صدر نے شام کے صدرپر تنقید کرتے ہوئے انہیں جانور کہہ دیا جس پر شامی صدر نے دلچسپ اور مختصر جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’’جو کہتا ہے وہی ہوتا ہے۔‘‘ 

نیوز ویک کے مطابق امریکی صدر نے شام میں زہریلی گیس کے حالیہ حملے کے بعد شامی صدر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہیں جانور قرار دیا تھا۔ اس کے جواب میں بشارالاسد کا کہنا تھا کہ وہ ڈونلڈ ٹرمپ کے توہین آمیز الفاظ کا جواب توہین کی صورت میں نہیں دیں گے۔ انہوں نے روسی ٹی وی ’آر ٹی‘ کو دئیے گئے ایک انٹرویو میں کہا ’’میں نے ڈونلڈ ٹرمپ کا کوئی الٹا نام نہیں رکھا ہوا، یہ انہی کا کام ہے، میں ان کی زبان میں ان کو جواب نہیں دوں گا۔ یہ ظاہر کرتا ہے وہ کیا ہیں، میرے خیال میں ایک مشہور اصول ہے کہ آپ جو ہوتے ہیں وہی کہتے ہیں، سو انہوں نے جو کہا ہے اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ کیا ہیں۔‘‘ دوسرے لفظوں میں ان کا مطلب تھا کہ امریکی صدر نے اپنی اوقات ظاہر کی ہے لہٰذا انہیں کوئی جواب دینے کی ضرورت نہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -