’47 سال کی عمر کے بعد مردوں کی یہ چیز ختم ہوجاتی ہے‘ سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پاکستانی مرد بے حد پریشان ہوجائیں گے

’47 سال کی عمر کے بعد مردوں کی یہ چیز ختم ہوجاتی ہے‘ سائنسدانوں نے ایسا ...
’47 سال کی عمر کے بعد مردوں کی یہ چیز ختم ہوجاتی ہے‘ سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پاکستانی مرد بے حد پریشان ہوجائیں گے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) مردوخواتین کسی عمر تک صنفِ مخالف کے لیے جاذبِ نظر رہتے ہیں، اب اس حوالے سے سائنسدانوں نے نئے تحقیقاتی سروے میں ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ سن کر پاکستانی مردوں کی پریشانی کی انتہاء نہ رہے گی۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ’’خواتین 45سال اور مرد 47سال کی عمر میں صنفِ مخالف کے لیے کشش کھو دیتے ہیں۔جب کسی خاتون کی عمر 45سال ہو جائے تو مرد اس کی طرف آنکھ اٹھا کر بھی نہیں دیکھتے اور مردوں کے ساتھ یہ کچھ 47سال کی عمر کو پہنچ کر ہونا شروع ہو جاتا ہے۔‘‘

ہارلے سٹریٹ کاسمیٹک سرجن ڈاکٹر جولیان ڈی سیلوا کی زیرقیادت ماہرین کی ٹیم نے اس سروے میں 2ہزار مردوخواتین سے مختلف سوالات پوچھے۔ ان میں شامل خواتین میں سے دو تہائی کا کہنا تھا کہ انہیں عمر کی 40کی دہائی میں پہنچ کر یہ احساس ہوا کہ اب وہ مردوں کے لیے کشش کھو چکی ہیں۔ یہ احساس 45سال کی عمر میں جا کر واضح طور پر ہونے لگا تھا۔46فیصد نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ ’’کاش ہم وقت کو واپس لیجانے میں کامیاب ہو جائیں اور ایک بار پھر مردوں کی اسی توجہ سے لطف اندوز ہو سکیں جو عمر کی 20اور 30کی دہائی میں تھی۔‘‘سروے میں شامل مردوں میں ہر چارمیں سے ایک کا کہنا تھا کہ انہیں 47سال کی عمر کو پہنچ کر یہ احساس ہوا کہ اب خواتین کو ان میں کوئی دلچسپی نہیں رہی۔ ڈاکٹر جولیان کا کہنا تھا کہ ’’ان عمروں کو پہنچ کر مردوخواتین جنسی اعتبار سے محسوس کرتے لگتے ہیں کہ گویا وہ غائب ہو چکے ہیں اور صنفِ مخالف کو نظر ہی نہیں آ رہے، یا وہ انہیں نظرانداز کرنے لگی ہے۔ چنانچہ ہم مانیں یا نہ مانیں لیکن ہم میں سے ہر ایک کو اس عمر کے اس حصے کا سامنا کرنا پڑتا ہے جب صنف مخالف کی ہم میں کوئی دلچسپی نہیں رہتی۔‘‘

مزید :

ڈیلی بائیٹس -