بنوں، پرائیویٹ ایجوکیشن نے فیسوں کی عدم ادائیگی پر جیل بھرو تحریک شروع کرنے کی دھمکی

  بنوں، پرائیویٹ ایجوکیشن نے فیسوں کی عدم ادائیگی پر جیل بھرو تحریک شروع ...

  

بنوں (این این آ ئی) پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک نے سکولز نہ کھولنے اور مذکورہ سکولوں کو چار ماہ کی ٹیوشن فیس کی عدم ادائیگی کی صورت میں جیل بھرو تحریک شروع کرنے کی دھمکی دیدی۔پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک بنوں کے ضلعی صدر عرفان اللہ خان میراخیل کی قیادت میں ضلع بھر کے پرائیویٹ سکولوں کے سربراہان اور اساتذہ نے ایک احتجاجی جلوس نکالا۔مظاہرین نے احتجاجی بینرز اُٹھارکھے تھے اور بازؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ رکھی تھی مظاہرین کا جلوس شہر کے مختلف بازاروں سے ہوکر پریس کلب پہنچا جہاں پر پین کے ضلعی صدر عرفان اللہ خان میراخیل، جنرل سیکرٹری ذیشان خان، سیکرٹری اطلاعات ملک نیاز علی خان میراخیل، لائق خان، زاہد اللہ، کاشف زمان نے سینکڑوں مظاہرین کے ہمراہ پُرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ جہاں پوری دنیا کے معمولات متاثر ہوئے ہیں وہاں سکولوں کی بندش سے تعلیم کو بھی سب سے زیادہ نقصان پہنچا ہے حکومت نے بغیر کسی منصوبہ بندی کے 13 مارچ کی شام سے لاک ڈاؤن کرتے ہوئے سکولوں کو بھی بند کردیا ہے جس کی وجہ سے صوبے 24 لاکھ بچے جوکہ پرائیویٹ سکولز میں زیر تعلیم ہیں جن میں ڈیڑھ لاکھ اساتذہ اور دیگر عملہ کا روزگار بھی وابستہ ہے یہ تمام سلسلہ ایک دم سے رک گیا ہے جہاں تعلیم کا نقصان ہورہا ہے وہاں مالی بحران بھی سنگین صورت اختیار کرگیا ہے، صوبے کے 86 ہزار نجی تعلیمی ادارے پریشانی سے دوچار ہیں کیونکہ یہ تمام ادارے طلبہ کے فیس سے ہی چلتے ہیں اور اس فیس کا زیادہ تر حصہ اخراجات کی مد میں چلا جاتا ہے اور صرف دس سے پندرہ فیصد رقم سکول کو بطور منافع بچ جاتے ہیں۔

پرائیویٹ ایجوکیشن

مزید :

علاقائی -