ملک کے 52اضلاع میں ٹڈی دل موجود، بلوچستان سب سے زیادہ متاثر، این ڈی ایم اے

      ملک کے 52اضلاع میں ٹڈی دل موجود، بلوچستان سب سے زیادہ متاثر، این ڈی ایم ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) این ڈی ایم اے نے ملک بھر میں ٹڈی دل کے خلاف آپریشن کی تفصیلات جاری کر دیں جس کے مطابق اس وقت ملک کے 52 اضلاع میں ٹڈی دل موجود ہے،بلوچستان میں 31، خیبر پختونخواہ میں 10، پنجاب میں 5 اور سندھ میں 6 اضلاع متاثر ہیں۔ ترجمان این ڈی ایم اے نے کہاکہ ٹڈی دل کے حملہ ذدہ علاقوں کا سروے اور کنٹرول آپریشن جاری ہے،ملک بھر میں 1102 ٹیمیں لوکسٹ کنڑول آپریشن میں حصہ لے رہی ہیں۔ ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں میں 3لاکھ 63 ہزار ہیکٹر رقبہ کا سروے ہوا،4900 ہیکٹر رقبہ کا ٹڈی مار ادویات سے ٹریٹمنٹ کیا گیا۔ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق بلوچستان میں 3200 ہیکٹر رقبہ پر اسپرے کیا گیا، ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق پنجاب میں 200 ہیکٹر پر سپرے کیا گیا،خیبر پختونخواہ میں 800ہکٹر رقبہ کی ٹریٹمنٹ ہوئی۔ ترجمان کے مطابق سندھ میں گذشتہ روز 700 ہیکٹر رقبہ ٹریٹمنٹ کیا گیا۔ ترجمان کے مطابق اب تک پورے ملک میں 4لاکھ 92 ہزار ہیکٹر رقبہ پر سپرے کیا جا چکا ہے۔ ناگہانی آفات کی صورتحال سے نمٹنے کے انتظامی ادارے نے ٹڈی دل اور کورونا وائرس سے متعلقہ شکایات کے فوری اندراج کیلئے مزید دو الگ ہاٹ لائن قائم کی ہیں۔این ڈی ایم اے کے ترجمان کے مطابق کورونا وائرس سے متعلقہ شکایات کیلئے ہاٹ لائن0304-11-01-061 جبکہ ٹڈی دل سے متعلقہ شکایات کیلئے 0304-111-01-62 پر رابطہ کیا جا سکتا ہے۔یہ دونوں ہاٹ لائن ناگہانی آفات کی صورتحال سے نمٹنے کے انتظامی ادارے کے آپریشن روم میں قائم کی گئی ہیں۔

ٹڈی دَل تفصیل

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے ملک کے چاروں صوبوں میں کورونا مریضوں کے لیے وینٹی لیٹرز تقسیم کیے جا رہے ہیں۔ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق بڑھتی ضرورت کے پیش نظر صوبوں میں 100 وینٹی لیٹرز تقسیم کیے جا رہے ہیں۔ صوبوں کو 10، 10 آئی سی یو وینٹی لیٹرز کی وصولی کے لیے خط ارسال کر دیا گیا ہے۔ترجمان کا کہنا ہے کہ چاروں صوبوں کے علاوہ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کو بھی 10، 10 بائی پیپ پورٹ ایبل وینٹی لیٹرز دیے جا رہے ہیں۔این ڈی ایم اے کے ترجمان کا کہنا تھا کہ تقسیم کے ساتھ وینٹی لیٹرز کے استعمال کے لیے طبی عملے کی تربیت کا بھی بندوبست کر دیا گیا ہے۔ترجمان این ڈی ایم اے نے کہا کہ تمام انتظامات کی تفصیل سے صوبوں کو آگاہ بھی کر دیا گیا ہے اور ہدایت کی گئی ہے کہ وینٹی لیٹرز کی ہسپتالوں میں تقسیم کی تفصیل سے این ڈی ایم اے کو آگاہ بھی کیا جائے۔ اسلام آباد کے پمزہسپتال کو پہلے ہی مطلوبہ تعداد کے مطابق وینٹی لیٹرز دیے جا چکے ہیں۔این ڈی ایم اے کے مطابق وینٹی لیٹرز کی تنصیب اور بعد از فروخت سروس کی سہولت بھی مہیا کی جا رہی ہیں۔

این ڈی ایم اے

مزید :

صفحہ اول -