سنتھیا ڈی رچی کی سیاسی امور میں مداخلت پر ملک بدر کیا جائے، سحر کامران

سنتھیا ڈی رچی کی سیاسی امور میں مداخلت پر ملک بدر کیا جائے، سحر کامران

  

اسلام آ باد (آئی این پی) پیپلز پارٹی کی سابق سینیٹر سحر کامران نے سوشل میڈیا کی وساطت سے پیپلز پارٹی کے خلاف سرگرم سوشل ایکٹوسٹ سنتھیا ڈی رچی کے خلاف سوشل میڈیا پرڈی جی آئی ایس آئی اور ڈی جی ایف آئی کو خط لکھ دیا سنتھیا ڈی رچی کی مشکوک سرگرمیوں کا نوٹس لیتے ہوئے ملک بدری کا مطالبہ کر دیا۔ خط میں سحر کامران نے کہا ہے کہ سنتھیا ڈی رچی کے مسلم دنیا کی پہلی وزیراعظم بے نظیر بھٹو شہید کے متعلق مذموم تبصرے تیزی سے اشتعال انگیزیوں کا سبب بن رہے ہیں ان کی پیپلز پارٹی کے خلاف سازشیں اور پاکستان کے عسکری نمائندگان کے ساتھ تصاویر سے عوام میں منفی پیغام جا رہا ہے۔انہوں نے اعلیٰ حکام سے سوال کیا کہ سنتھیا ڈی رچی پاکستان میں کیوں اور کس حیثیت سے رہائش پذیر ہیں ان کے ویزے کی نوعیت اور مدت کتنی ہے اور پاکستان میں ان کی رہائش کے حوالے سے کون سپورٹ کر رہا ہے۔ سنتھیا ڈی رچی ایک طرف خود کو سیاح، صحافی اور بیلی ڈانسر کے طور پر متعارف کرواتی رہی ہیں لیکن پاکستان میں اعلی سطح پر خود کو سیاسی امور میں مداخلت کر رہی ہیں۔ وہ کیوں سند ھ اور سندھی حکومتی امور کو ٹارگٹ کرتی ہیں۔ پاکستان میں اس طرح کے مشکوک کرداروں کی موجودگی کے حوالے سے سرکاری حکام کی پالیسی کیا ہے۔

سحر کامران

مزید :

صفحہ آخر -