کابل، داعش کا بم دھماکہ، نیوز چینل کے 2ملازم جاں بحق،ٹریفک حادثہ میں 9افراد، راکٹ پھٹنے سے 3شہری مارے گئے

کابل، داعش کا بم دھماکہ، نیوز چینل کے 2ملازم جاں بحق،ٹریفک حادثہ میں 9افراد، ...

  

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی) افغانستان میں مقامی میڈیا کے عملے کی بس پر بم حملہ ہوا جس کے نتیجے میں ایک صحافی سمیت دو افراد جاں بحق ہو گئے۔ داعش نے ذمہ داری قبول کر لی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق خورشید ٹی وی نیوز چینل کی وین 15 ملازمین کو لے کر آ رہی تھی اس دوران داعش کے دہشتگردوں نے مقناطیسی بم گاڑی کے ساتھ چپکا دیا جو تھوڑی دیر بعد پھٹ گیا جس کے نتیجہ میں ایک صحافی اور ڈرائیور موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔افغان وزارت داخلہ کے مطابق دہشت گردوں نے ٹی وی چینل کی منی وین کو نشانہ بنایا، حملہ آوروں نے مقناطیسی بم وین سے چپکا یا۔ اس کے نتیجے میں افغان نجی ٹی وی خورشید نیوز چینل کا ایک صحافی اور ڈرائیور جاں بحق ہوگئے جبکہ چھ زخمی ہو گئے۔افغان خبر رساں ادارے کے مطابق جاں بحق صحافی نجی ٹی وی کارپورٹر تھا، اس کا نام ضمیر امیری جبکہ جاں بحق ڈرائیور کا نام شفیق بتایا گیا ہے۔ زخمی ہونے والے چھ افراد میں سے دو افراد کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔ طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اس حملے سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ حملہ افغان طالبان نے نہیں کیا ہم اس کی مذمت کرتے ہیں۔ حملے کے چند گھنٹوں بعد ہی داعش نے ذمہ داری قبول کرلی۔داعش سے وابستہ ویب سائٹ پر ایک بیان میں، گروپ نے کہا کہ یہ حملہ خورشید ٹی وی کے ملازمین کو لے جانے والی بس پر کیا گیا ہے،خورشید نیوز چینل حکومتی پالیسیوں کی ترجمانی کرتا ہے۔دریں اثناافغانستان کے مغربی صوبہ ہرات میں ٹریفک کے المناک حادثہ میں سے ایک ہی خاندان کے 9 افراد مارے گئے۔ جاں بحق افراد میں 4بچے اورتین خواتین بھی شامل ہیں۔ المناک یہ حادثہ صوبہ ہرات میں پیش آیا۔جاں بحق اہلخانہ کا تعلق صوبہ کپیسا کے ایک ہی خاندان سے ہے۔ادھر صوبہ پروان میں راکٹ کا شیل گرنے سے ایک گھر کے تین افراد ہلاک ہوگئے۔

افغانستان،ہلاکتیں

مزید :

صفحہ آخر -