حکومت بیانات تک محدود، ایک کروڑ سے زائد اوورسیز پاکستانی کرب اور اذیت میں مبتلا ہیں: سرا ج الحق

حکومت بیانات تک محدود، ایک کروڑ سے زائد اوورسیز پاکستانی کرب اور اذیت میں ...

  

پشاور (آن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت اوورسیز پاکستانیوں کے حوالے سے بیانات تک محدود ہے عملی طور پر کچھ نہیں کررہی ہے۔حکومت اوورسیز پاکستانیوں کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔ایک کروڑ سے زائد پاکستانی اس وقت ایک کرب اور اذیت میں مبتلا ہیں جب کہ وزراء آج بھی بیانات دے رہے ہیں کہ ایٹمی دھماکوں کا کریڈیٹ کس کو دیں۔ آپس میں ریوڑیاں بانٹ رہے ہیں اور حکومتی وزراء نتھیاگلی میں سیر سپاٹوں میں مصرو ف ہیں۔ اوورسیز پاکستانیوں نے ہر موقع پر پاکستان سے محبت کا ثبوت دیا ہے اور یہ وہ لوگ ہیں جو ہر سال 20 ارب ڈالرز زرمبادلہ پاکستان بھیجتے ہیں اور پاکستان میں کوئی بھی مصبیت آتی ہے تو یہ آگے بڑھ کر اس میں حصہ لیتے ہیں اور پاکستان کی مددکرتے ہیں۔ قرض اتاروملک سنواروں ہو یا زلزلہ و سیلاب کا فنڈز ہو ہر مشکل میں اوورسیز پاکستانی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہیں لیکن آج یہ کورونا وباء کی وجہ سے مشکل میں ہے تو ہمارے حکومت اور ملک نے اس کو بے یار ومددگار چھوڑ دیا ہے۔ اس وقت پاکستانیوں کی لاشیں بیرون ممالک حجروں اور ڈیروں میں پڑے ہیں۔لاشوں سے مردہ خانے بھر گئے ہیں اور ان کو وارثین تک پہنچانے کا کوئی انتظام نہیں ہے۔ اوورسیز پاکستانی گھر آنا چاہتے ہیں لیکن ان کے لیے کوئی انتظام نہیں ہے وفاقی اور صوبائی حکومتیں سو رہی ہیں اور سفارت خانوں تک ان کی رسائی نہیں ہے۔ حکومت نے ان کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنا شروع کردیا ہے اور700 ریال کا ٹکٹ 3300 میں دیا جارہاہے جو شرم ناک ہے۔ یہ لو گ لاوارث ہیں۔جماعت اسلامی اوورسیز پاکستانیوں کے لیے آواز بلند کرے گی اور ان کو تنہا نہیں چھوڑے گی۔ وہ پشاور پریس کلب کے سامنے جماعت اسلامی کے زیر اہتمام اوورسیز پاکستانیوں کے حق میں احتجاجی مظاہرے سے ٹیلی فونک خطاب کر رہے تھے۔ احتجاجی مظاہرے سے امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا سینٹر مشتاق احمد خان، امیر جماعت اسلامی پشاو رعتیق الرحمن، سابق صوبائی وزیر حافظ حشمت خان، جے آئی یوتھ کے صوبائی صدر صدیق الرحمن پراچہ، مولانا حنیف اللہ، ضلعی جنرل سیکرٹری قاری احمد سعید اور دیگر قائدین نے بھی خطاب کیا۔ مظاہر ے میں کثیرتعداد میں لوگوں نے شرکت کی جنہوں نے پلے کارڈز اٹھار کھے تھے جس پر اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لیے نعرے درج تھے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -