حکومت مذہبی طبقات کو اعتماد میں لے کر تعلیمی پالیسی بنائے،زاہد الراشدی

حکومت مذہبی طبقات کو اعتماد میں لے کر تعلیمی پالیسی بنائے،زاہد الراشدی

  

لاہور (پ ر) پاکستان شریعت کونسل کے سیکرٹری جنرل مولانا زاہد الراشدی،جمعیت علماء اسلام پاکستان (س) کے سیکرٹری جنرل مولانا عبدالرؤف فاروقی اورمجلس احرار اسلام پاکستان کے سیکرٹری جنرل عبداللطیف خالد چیمہ نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ حکومت مذہبی طبقات کو اعتماد میں لے کر کوئی ایسی پالیسی بنائے جس سے دینی مدارس اور تعلیمی اداروں (سکولز،کالجز)کے طلباء کو تعلیمی نقصان سے بچایا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ طویل عرصے کے لاک ڈاؤن میں sopsکے حوالے سے حکومت کے ساتھ سب سے زیادہ مساجد کے آئمہ حضرات نے تعاون کیا۔

اور ہم آئندہ بھی sopsپر عمل کرنے کے لیے حکومت کے ساتھ بھرپور تعاون کرنے کے لیے تیار ہیں۔انہوں نے کہا کہ جب سے دینی مدارس قرآن کریم کی خدمت کررہے ہیں اس وقت سے لیکر آج تک اتنا لمبا عرصہ حفاظ کرام کی کلاسز بند نہیں ہوئی،اگر اسی طرح حفاظ کرام کی کلاسز بند رہیں تو شعبہ تحفیظ کا ناقابل تلافی نقصان ہوسکتا ہے۔تینوں مذہبی تنظیموں کے سیکرٹریز جنرل نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد دینی مدارس کو کھولا جائے تاکہ قرآن و سنت کی تعلیم شروع ہواور اس کی برکت سے ہمارا ملک اس وباء سے پاک ہو جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -