یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس ،سپریم کورٹ نے امریکی نژاد پاکستانی کو سرمایہ کاری رقم ملک سے باہر لے جانے کی استدعا پر ایک ماہ کا وقت دےدیا

یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس ،سپریم کورٹ نے امریکی نژاد پاکستانی کو سرمایہ ...
یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس ،سپریم کورٹ نے امریکی نژاد پاکستانی کو سرمایہ کاری رقم ملک سے باہر لے جانے کی استدعا پر ایک ماہ کا وقت دےدیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے آئی ٹی یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس میں امریکی نژاد پاکستانی کی جانب سے سرمایہ کاری رقم ملک سے باہر لے جانے کی استدعا پر ایک ماہ کا وقت دے دیا۔

سپریم کورٹ میں امریکی نژاد پاکستانی کی جانب سے آئی ٹی یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،جسٹس عمرعطابندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔جسٹس عمر عطابندیال نے کہا کہ اور سیز پاکستانی حب الوطنی میں پاکستان میں سرمایہ کاری کرتے ہیں،پیسہ باہر گیا تو ملک کا نقصان ہو گا،یونیورسٹی اسلام آباد میں نہیں بنانا چاہتے تو مری یا کسی اور مقام پر بنا لیں،اس ملک کی خوبصورتی دیکھیں،خدمت کے جذبے کوقائم رکھیں،سپریم کورٹ آپ کوہرقسم کاتحفظ دے گی۔

جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ آپ کوفیصلے کیلئے ایک ماہ کاوقت دیتے ہیں،ایک ماہ میں شایدماسک بھی اترجائیں،عدالت نے کہاکہ سرمایہ کاری واپس لے جانی ہے توپھرقانون کے مطابق فیصلہ ہوگا،ڈالرزمیں پیمنٹ کی وجہ سے ایکس چینج کے معاملات بھی دیکھیں گے۔واضح رہے کہ سی ڈی اے سے معاہدہ نہ ہونے پرامریکی نژادپاکستانی نے رقم واپس مانگی تھی ۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -