امریکہ بھرمیں مظاہرے، صدر ٹرمپ کا صبر جواب دے گیا، سخت احکامات جاری

امریکہ بھرمیں مظاہرے، صدر ٹرمپ کا صبر جواب دے گیا، سخت احکامات جاری
امریکہ بھرمیں مظاہرے، صدر ٹرمپ کا صبر جواب دے گیا، سخت احکامات جاری

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکا میں سیاہ فام شہری کے قتل کے بعد ہونے والے پرتشدد احتجاجی مظاہروں اور ہنگاموں کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا صبر جواب دے گیا۔ ملک بھرکے ریاستی گورنرز کو شرپسندوں کے خلاف سخت کارروائی کے احکامات جاری کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ ایسے لوگوں کے ساتھ کوئی رعائت نہ برتی جائے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کی گئی ایک پوسٹ میں انہوں نے کہاکہ فلاڈیلفیا میں لا اینڈ آرڈر کا عالم یہ ہے کہ وہ لوگ وہاں لوٹ مار مچائی جارہی تھی جس پر نیشنل گارڈز کو طلب کرنا پڑا۔

تیس مئی کو کی گئی اپنی ایک  ٹویٹ کو دوبارہ جاری(ری ٹویٹ) کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ تشدد کی حدود کو پار کرنے ایک وفاقی جرم ہے، لبرل گورنرز اور میئرز اسخت ترین اقدامات کریں ورنہ مرکزی حکومت مداخلت کرے گی اور وہ سب کچھ کرگزرے گی جو وہ کرسکتی ہے۔اور اس میں فوج کی لامحدود طاقت کااستعمال اور بڑے پیمانے پر گرفتاریاں شامل ہیں"

خیال رہے کہ امریکہ اس وقت انتہائی بدامنی کاشکار نظرآریا ہے جہاں ملک بھر میں پرتشدد احتجاجی مظاہرے کیے جارہے ہیں۔ امریکی نیشنل گارڈز کا کہنا ہے کہ کرفیو کے باوجود احتجاجی مظاہروں کی شدت مسلسل بڑھ رہی ہے۔ ملک بھر کے تیرہ بڑے شہروں میں کرفیو نافذ ہے اور وہاں نیشنل گارڈز کے دستے ذمہ داریاں سنبھال چکے ہیں جبکہ اب تک چار ہزار لوگوں کو گرفتار بھی کیاجاچکا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -