سہولیات زیرد: بجٹ میں نا بینا خصوصی افراد کو ریلیف دیا جائے: پاکستان فورم 

سہولیات زیرد: بجٹ میں نا بینا خصوصی افراد کو ریلیف دیا جائے: پاکستان فورم 

  

  

ملتان (سٹی رپورٹر)بجٹ میں نابینا اور خصوصی افراد کے لئے فنڈ مختص کئے جائیں فنڈ ز نہ ہونے کی وجہ سے خصوصی افراد مسائل کا شکار ہیں گذشتہ پانچ سالوں سے بریل بک نہیں دی جارہی، بہاولپور میں موجود بریل پریس کئی سالوں سے خراب ہے بریل پریس کو ٹھیک کرانے کے لئے پیسے نہ ہونے کی وجہ سے لاکھوں روپے مالیت کا کاغذ خراب ہو رہاہے نابینا سکولوں میں موجود ایمبوزر تک نہیں ہیں ہر آنے والے سیاست دانون اورحکومتی ارکان کو بار بار خطوط ارسال کرنے کے باوجود خصوصی افراد کی شنوائی نہیں ہو رہی ہے ان خیالا ت کا اظہار نابیناافراد خلیل احمد (بقیہ نمبر45صفحہ6پر)

، اللہ ڈتہ، سیف الرحمن، محمد ندیم، صغیر احمد، شکفتہ، عائشہ، اور صائمہ نے روزنامہ پاکستان فورم میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا اس موقع پر انہوں نے کہاہے کہ ہر سال بجٹ آتا ہے اور اس بجٹ میں مختلف شعبہ جات کی ترقی کے اقدامات کئے جاتے ہیں لیکن نابینا افراد کے لئے کسی قسم کے کوئی اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے نابیناافراد پسماندگی کا شکارہیں انہوں نے کہاہے ایک طرف تو حکومت نابینا اور خصوصی افراد کی ترقی خوشحالی کے لئے بڑے بڑے دعوے اور وعدے کر رہی ہے جبکہ دوسری طرف نابیناافراد بنیادی سہولیات سے محرو م ہیں جبکہ خصوصی افراد کے ملازمٹ کوٹہ میں نابینا افراد کو ملازمتیں کی فراہمی بھی سست روزی کا شکا رہے انہوں نے کہاہے کہ نابینا افراد کو بریل (ڈاٹ سسٹم) کے تحت تعلیم حاصل کرتے ہیں جبکہ ان کو ڈاٹ والی بریل سلیٹ، بریل کتابیں ایمبوزر، سفید چھڑی،نابینا افرادکے لئے اہمیت کے حامل ہے لیکن اس کے باوجود حکومتی سطح پر ان کو یہ بنیادی چیزیں فراہم نہیں کی جارہی انہوں نے حکومتی ارکان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ خصوصی اور نابینا افراد کے لئے بجٹ میں زیادہ سے زیادہ فنڈ مختص کریں تاکہ ان کی مشکلات کا خاتمہ ہو اور کو تعلیم حاصل کرنے کے مواقع مل سکیں۔

فنڈز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -